The news is by your side.

Advertisement

فرانسیسی صدر میکرون کی مقبولیت کم ترین سطح پر پہنچ گئی

پیرس: فرانس میں جاری احتجاج کے باعث فرانسیسی صدر کی مقبولیت کا گراف تیزی سے نیچے کی جانب گرا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک سروے رپورٹ میں فرانسیسی صدر ایمانویل میکرون کی مقبولیت مئی 2017 میں ان کے منصب سنبھالنے کے بعد سے اب تک کی نچلی ترین سطح 27 فیصد پر پہنچ گئی ہے۔

اوڈوکسا انسٹی ٹیوٹ کی جانب سے کرائے جانے والے سروے میں بتایا گیا ہے کہ ’یلو ویسٹ تحریک‘ کا احتجاج شروع ہونے کے ایک ماہ بعد سے اب تک فرانسیسی صدر کی مقبولیت میں کمی کا سلسلہ جاری ہے۔

حالیہ سروے میں شرکت کرنے والے 73 فیصد فرانسیسی شہریوں نے میکرون کے بارے میں منفی رائے کا اظہار کرتے ہوئے ان کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

مزید پڑھیں: فرانس کی ’یلو ویسٹ تحریک‘ جرمنی پہنچ گئی، احتجاجی مظاہرے شروع

سروے میں 33 فیصد شہریوں نے میکرون کو صدارت کے منصب کے لیے اہلیت کا حامل جانا جبکہ اس کے مقابل تقریباً 68 فیصد افراد مخالف رائے رکھتے ہیں۔

یلو ویسٹ تحریک سے نمٹنے کے حوالے سے رائے دیتے ہوئے 47 فیصد فرانسیسیوں کا خیال ہے کہ میکرون اپنے دور صدارت کے دوران ہمدرد ثابت ہوئے جبکہ 53 فیصد نے مخالف آراء کا اظہار کیا۔

مذکورہ سروے 13 اور 14 دسمبر کو انٹرنیٹ کے ذریعے کیا گیا، اس دوران 18 برس سے زیادہ عمر کے 990 افراد کو شامل کیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں