The news is by your side.

Advertisement

میکسیکو میں فریدا کاہلو باربی ڈول کی فروخت پر پابندی عائد

میکسیکو :‌ عدالت نے بیسویں صدی کی مشہور زمانہ آرٹسٹ فریدا کاہلو باربی ڈول کی فروخت پر پابندی عائد کرتے ہوئے حکم دیا کہ آرٹسٹ کی تصاویر فروخت کرنے کا حق صرف اہل خانہ کو ہے.

تفصیلات کے مطابق میکسیکو کی عدالت نے امریکہ میں بچوں کی پسندیدہ گڑیا باربی ڈول کی کے متنازعے ماڈل فریدا کاہلو کی میکسیکو میں فروخت پر پابندی عائد کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ ’فریدا کاہلو کی تصاویر کی فروخت کا حق صرف ان کے اہل خانہ کو ہے‘۔

کھلونے بنانے والی کمپنی میٹل کارپوریشن نے سرحدوں کو بالائے طاق رکھ کر مخلتف غیر روائتی شعبوں میں خدمات انجام دینے والی خواتین کی حوصلہ افزائی کے لیے فریدا کاہلو کی باربی ڈول متعارف کروائی تھی۔

عدالت کے سامنے فریدا کاہلو کے رشتے داروں نے مؤقف اختیار کیا کہ کھلونے بنانے والی کمپنی نے مشہور پینٹر فریدا کی تصاویر کو اہل خانہ کی اجازت کے بغیر استعمال کیا۔

فریدا کاہلو کی بھتیجی مارا رومیو نے غیر ملکی خبر رساں ادارے کو بتایا کہ ’مذکورہ پینٹر کا گندومی رنگ کی حامل خاتون تھیں لیکن باربی ڈول میں ان کا رنگ ذرا ہلکا دکھایا گیا ہے‘۔

مارا رومیو کا مزید کہنا تھا کہ ’ میں فریدا کی باربی ڈول کو پسند کروں گی، لیکن مذکورہ گڑیا کو نہیں کیوں کہ اس کا رنگ ہلکا ہے‘۔


امریکی اولمپیئن ا بتہاج محمد سے متاثرہو کر پہلی بار با حجاب باربی متعارف


مذکورہ پینٹر کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ عدالت کا فیصلہ صرف میکسیکو میں نافذ ہوگا اور دوسری جگہوں پر بھی فریدا کاہو باربی ڈول سے متعلق درخواست دائر کی جائے گی۔

فریدا کاہلو کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ امریکا سے بھی باربی ڈول کے متلعق ایسے ہی فیصلے کی امید ہے، البتہ میٹل کمپنی کے وکیل نے اس معاملے پر کوئی رد عمل نہیں دیا ہے۔

یاد رہے کہ بیسویں صدی میں فریدا میکسیکو کی مشہور آرٹسٹ اور میکسیکن کمیونسٹ پارٹی کی سرگرم رکن بھی تھیں، فریدا نے میکسیکن ثقافت کی اپنی پینٹنگ کے ذریعے ترویج کی تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں