The news is by your side.

Advertisement

این اے75ڈسکہ ضمنی الیکشن: انکوائری رپورٹ فردوس عاشق اعوان پربھی انگلیاں اٹھ گئیں

لاہور : این اے75ڈسکہ ضمنی الیکشن کی انکوائری رپورٹ فردوس عاشق اعوان پربھی انگلیاں اٹھ گئیں اور کہا گیا پریذائیڈنگ افسران کی گمشدگی اتفاق نہیں بلکہ منصوبہ بندی تھی۔

تفصیلات کے مطابق این اے75ڈسکہ ضمنی الیکشن کی انکوائری رپورٹ کےمزیدنکات سامنےآگئے، رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پریذائیڈنگ افسران کی گمشدگی اتفاق نہیں بلکہ منصوبہ بندی تھی ، پریذائیڈنگ افسران کو پہلے پسرور پھر سیالکوٹ لے جایا گیا۔

انکوائری رپورٹ میں فردوس عاشق اعوان پربھی انگلیاں اٹھ گئیں ، جس میں کہا گیا ہے کہ اےسی ڈسکہ کےگھرپردھاندلی کیلئےمیٹنگ ہوئی، میٹنگ میں فردوس عاشق اورڈپٹی ڈائریکٹرمحکمہ تعلیم محمداقبال ، وزیراعلیٰ پنجاب کےڈپٹی سیکرٹری علی عباس سمیت دیگر افراد بھی موجود تھے۔

پریذائیڈنگ افسران کوشناختی کارڈکی نقول پربھی ووٹ کی اجازت کاکہاگیا، عملےکوکہاگیاپولیس اورانتظامیہ کے کام میں مداخلت نہیں کرنی ، انتخابی عملہ اورسرکاری مشینری قانون شکنوں کے کٹھ پتلی بنے رہے۔

انکوائری رپورٹ میں لاپتہ پریذائیڈنگ افسران کاکرداربھی مشکوک قرار دیتے ہوئے الیکشن کمیشن کے اپنے افسران کو بھی ذمہ دار قراردیا گیا ہے۔

رپورٹ میں ڈی آراو اور ریٹرننگ افسر کو آئندہ انتخابی ڈیوٹی سے دور رکھنےکی سفارش کی ہے ، ڈی آراوعابدحسین اورآراواطہرعباسی الیکشن کمیشن کےاپنےافسران تھے۔

انکوائری کمیشن نے فارم 45اور 46میں ترمیم اور فارم45اور46میں پولنگ ایجنٹ کی ریسیونگ کا خانہ شامل کرنےکی سفارش کردی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں