The news is by your side.

Advertisement

13 اپریل کو مستقبل کا لائحہ عمل تیار ہوگا: ناصر حسین شاہ

کراچی: وزیراطلاعات سندھ ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ کروناوائرس کے پیش نظر 13اپریل کو اہم اجلاس میں طے ہوگا کہ آگے ہم نے کیا کرنا ہے، معاشی لحاظ سے بھی ہمیں مسائل درپیش ہیں جنہیں دیکھنا ہوگا۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام اعتراض ہے میں گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ ایس اوپیز بنا رہے ہیں، مرحلہ وار کمپنیزیا اداروں کو کھولا جاسکتا ہے، ہم ابھی لاک ڈاؤن ختم نہیں کرنا چاہتے، ایسی صورت حال نہیں چاہتے کہ بعد میں مسائل مزید گھمبیر ہوں، وفاق اور صوبوں کی مشاورت سے جو فیصلہ ہوگا اس پر عمل کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ این ڈی ایم اے کی جانب سے جو ٹیسٹنگ کٹس دی گئی وہ نامکمل تھیں، اس وقت ہمارے پاس وہ ٹیسٹنگ کٹس ہیں جو خود درآمد کی ہیں، اس وقت ہم ڈھائی تین ہزار ٹیسٹ کرسکتے ہیں لیکن کر نہیں پا رہے، ٹیسٹنگ اس لیے نہیں کر پارہے کہ ہمارے پاس کٹس کم ہیں۔

کرونا وائرس کا خوفناک پھیلاؤ، کراچی کی 11 یونین کونسلز سیل، میئر لاعلم

ناصرحسین شاہ کا کہنا ہے کہ وفاق کی جانب سے آج مزید ٹیسٹنگ کٹس بھی ملی ہیں، وفاق کی جانب سے کچھ کٹس ملی تھیں جس کا نتیجہ35فیصد آرہا تھا، ہم نے ایسی ٹیسٹنگ کٹس کو استعمال ہی نہیں کیا، ٹیسٹنگ استعداد بڑھانے کے بغیر کام نہیں ہوسکتا، اسپتال میں اپنے طور پر استعداد بڑھانے کی کوشش کررہے ہیں۔

وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ اسپتال، طبی عملے اور دیگر چیزوں پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے، کرونا مریضوں کی تعداد تیزی سے بڑھ رہی ہے، ٹیسٹنگ کے لحاظ سے ہمارے پاس تعداد آرہی ہے، ٹیسٹنگ کی استعداد بڑھائی جائے گی تو مزید مریض بھی سامنے آئیں گے، رقم کی تقسیم کے دوران لوگوں کو جمع کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں