The news is by your side.

Advertisement

سانحہ گڈانی: لاشیں‌ نکلنے کا سلسلہ جاری، ہلاکتوں‌ کی تعداد 23 ہوگئی

حب: گڈانی شپ بریکنگ یارڈ میں ایک آئل ٹینکر کی صفائی کے دوران دھماکوں کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 23 ہوگئی جبکہ 60 سے زائد افراد زخمی ہیں، آگ پر قابو پالیا گیا تاہم جہاز سے لاشیں نکلنے کا سلسلہ جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق حب میں گڈانی کے شپ بریکنگ یارڈ میں آئل ٹینکر کی صفائی کے دوران آگ بھڑک اٹھی اور ٹینکر میں یکے بعد دیگرے کئی دھماکے ہوئے۔

دھماکوں کے وقت وہاں 100 کے قریب مزدور موجود تھے جن کی بڑی تعداد دھماکوں کی زد میں آئی۔ کئی افراد اسپتال لے جانے کے دوران راستے میں ہی دم  توڑ گئے جبکہ درجنوں افراد جھلس کر زخمی ہوگئے۔

gadani-post-2

اطلاعات کے مطابق آگ کی شدت کی وجہ سے امدادی کاموں میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا تاہم اب آگ پر قابو پالیا گیا ہے، تاحال 23 لاشیں نکالی جاچکی ہیں اور یہ سلسلہ ابھی جاری ہے۔

قبل ازیں مزدوروں کا کہنا تھا کہ آگ پر قابو نہیں پایا گیا تو مزید بحری جہازوں میں بھی آگ لگ سکتی ہے، ان کے مطابق دھماکوں کے وقت متعدد مزدوروں نے سمندر میں چھلانگ لگا کر اپنی جانیں بچائیں۔

ذرائع کے مطابق ٹینکر کی صفائی کرنے کے لیے کئی مزدور اندر اترے ہوئے تھے جن میں سے کسی کو بھی تاحال باہر نہیں نکالا گیا ہے، جائے حادثہ پر مزدوروں کے اہل خانہ بھی پہنچنا شروع ہوگئے ہیں جو اپنے پیاروں کے بارے کسی خبر کے منتظر ہیں۔

حادثے کے بعد 50 سے زائد ایمبولینسیں جائے وقوعہ کی جانب روانہ کردی گئیں۔ زخمیوں کو سول اسپتال کراچی منتقل کیا گیا ہے جبکہ کراچی کے 2 بڑے اسپتالوں میں ایمرجنسی بھی نافذ کردی گئی، پولیس نے مزید ہلاکتوں کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

مذکورہ اسکریپ جہاز کو خریدنے والے چوہدری عبدالحفیظ کو بھی پولیس نے اپنی حراست میں لے لیا ہے۔

gadani-post-1

وزیر اعظم، گورنر کا اظہار افسوس

وزیر اعظم نواز شریف نے بھی گڈانی شپ یارڈ میں ہونے والے حادثے کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو زخمیوں کو طبی سہولیات فراہم کرنے اور واقعہ کی تحقیقات کرنے کی ہدایت کی ہے۔

وزیر اعظم نے قیمتی جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کرتے ہوئے ان کے لواحقین سے اظہار ہمدردی اور دعائے مغفرت کی۔

دوسری جانب گورنرسندھ ڈاکٹرعشرت العباد خان نے بھی حادثے کے باعث قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے سانحہ میں جاں بحق ہونے والے افراد کے اہل خانہ سے اظہار تعزیت کیا اور کراچی لائے جانے والے زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

وزیراعلیٰ بلوچسستان کا نوٹس، ایف آئی آر درج

وزیراعلیٰ بلوچستان ثنا اللہ زہری نے واقعے کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے تحقیقات اور زخمیوں کو بہترین طبی امداد فراہم کرنے کا حکم دےدیا اور کہا کہ ذمہ دار افراد کے خلاف کارروائی کی جائے، متاثرہ خاندانوں کی مدد کی جائے، ٹھیکے داروں کو حفاظتی اقدامات یقینی بنانے کا پابند کیا جائے۔

نمائندہ اے آر وائی نیوزعبدالرزاق موندرہ نے بتایا کہ گڈانی پولیس اسٹیشن میں 3 افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی گئی ان میں ٹھیکے دار اور مالک شامل ہیں،تاحال فائر بریگیڈ آگ بجھانے میں مصروف ہیں، امدادی اداروں کی کارروائیاں جاری ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں