The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں مون سون بارشوں کے بعد کچرے اور گندگی کے ڈھیر برقرار

کراچی: شہرقائد میں مون سون بارشوں کے بعد کچرے اور گندگی کے ڈھیر تاحال موجود ہیں، مختلف علاقوں میں سیوریج کے پانی کی نکاسی کا انتظام بھی نہ ہوسکا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں گندگی کے باعث تعفن اور بدبو مختلف امراض کا سبب بننے لگے ہیں۔ شاہ فیصل کالونی، ملیر، اولڈ سٹی ایریا، کھارا در، حقانی چوک، گولیمار، لیاقت آباد، سرجانی ٹاؤن، ملیر میمن گوٹھ، خدادادکالونی، محمود آباد اختر کالونی اور قیوم کالونی میں بھی گندگی اور کچرے کے ڈھیر موجود ہیں۔

کراچی کے علاقے سائٹ بلدیہ سمیت دیگر علاقوں بھی گندگی کی لپیٹ میں ہے۔ علاقہ مکینوں نے شکایت کی ہے کہ کراچی کی سڑکوں اور فٹ پاتھوں پر کچرے کے انبار لے ہیں، متعلقہ ادارے ایکشن لے۔

وزیراعلیٰ پنجاب کا بارشوں کے پیش نظر متعلقہ انتظامیہ کو الرٹ رہنے کا حکم

کورنگی کی حدودنجی سوسائٹی میں 6دن سے سیوریج کاپانی جمع ہے۔ شہریوں نے وزیراعظم عمران خان سے اپیل کی ہے کہ وہ موجودہ صورت حال کا فوری طور پر نوٹس لیں۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے صوبے میں موسلادھار بارشوں کے پیش نظر واٹر اینڈ سینیٹیشن ایجنسی (واسا) اور متعلقہ انتظامیہ کو الرٹ رہنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ موسم کی صورت حال کے تسلسل کے ساتھ مانیٹرنگ کی جائے، نکاسی آب کے لیے وضع کردہ پلان پر ہر صورت عمل ہونا چاہیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں