The news is by your side.

Advertisement

سی این جی صارفین کو نئی مشکل کا سامنا، سوئی سدرن کمپنی نے بڑا اعلان کردیا

کراچی : سوئی سدرن گیس کمپنی نے یکم دسمبر سے سندھ میں ڈھائی ماہ کیلئے تمام سی این جی اسٹیشنز بند کرنے کا اعلان کردیا، ترجمان کا کہنا ہے کہ گھریلو صارفین کی ضرورت پوری کرنےکےلیےگیس فراہمی بند کی جائے گی۔
.
تفصیلات کے مطابق سندھ میں گیس کے بحران کے باعث سی این جی اسٹیشنز کو ڈھائی ماہ کے لئے گیس بند کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا ، سوئی سدرن نے کہا کہ گھریلو صارفین کی ضروریات پوری کرنے کے لئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے، لوڈ مینجمنٹ کے تحت گھریلو صارفین کی ضرورت پوری کرنے کے لیے سی این جی سیکٹر کو گیس کی فراہمی بند کی جائے گی۔

سوئی سدرن کا کہنا ہے کہ غیر برآمدی صنعتوں کو پہلے ہی گیس کی سپلائی بند کردی گئی ہے، اب سی این جی اسٹیشنز کو 1 دسمبر 2020 سے 15 فروری 2022 تک گیس کی فراہمی بند رہے گی۔

ترجمان کے مطابق طلب و رسد کا فرق بڑھ جانے سے یہ فیصلہ کیا گیا ، تاہم زیرو ریٹڈ صنعتیں بشمول کیپٹو پاور پلانٹس کو گیس کی سپلائی بحال ہے تاہم تمام عام صنعتوں، زیرو ریٹیڈ ایکسپورٹ انڈسٹریز بشمول اسکے کیپٹیو پاور پلانٹس اور فرٹیلائزر سیکٹر کو گیس کی فراہمی جاری رہے گی۔

واضح رہے کہ بلوچستان میں انسانی جانوں کی بقا کے لیے اضافی گیس کی فراہمی ناگزیر ہے کیونکہ گیس ان لوگوں کے لیے لائف لائن کا کام کرتی ہے جنہیں انتہائی کم درجہ حرارت میں گیس کے مختلف آلات کے ذریعے خود کو گرم رکھنے کی شدید ضرورت ہوتی ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے کہا تھا کہ گھریلو صارفین کو صرف کھانا پکانے کے لیے دن میں تین بار گیس فراہم کی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں