The news is by your side.

Advertisement

گیٹ وک ڈرونز، برطانوی پولیس نے جوڑے کی گرفتاری پر معذرت کرلی

لندن: سسیکس پولیس کے چیف کانسٹیبل نے گیٹ وک ایئرپورٹ پر ڈرونز اڑانے کے الزام میں گرفتار جوڑے سے معذرت کرلی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق سسیکس پولیس کے چیف کانسٹیبل نے کہا ہے کہ وہ گیٹ وک ایئرپورٹ پر افرا تفری میں ایک جوڑے کو 36 گھنٹے تک حراست میں رکھنے پر معذرت کرتے ہیں۔

پاؤل گئیت اور ایلائنی کرک نے کہا کہ گھر کی تلاشی لینے اور ہماری شناخت ظاہر کیے جانے کے بعد وہ محسوس کرتے ہیں ہمیں نقصان پہنچایا گیا ہے۔

گلس یارک نے کہا کہ انہیں گرفتاری کی معقول وجوہات پر قائل کیا گیا تھا، انہوں نے ایئرپورٹ کے قریب پائے جانے والے دو ڈرونز سے تعلق مسترد کردیا تھا۔

سسیکس پولیس کے چیف کانسٹیبل کا کہنا تھا کہ پاؤل گیئت کو ایک مقررہ وقت تک حراست میں رکھے جانے کا دفاع کیا تھا حالانکہ ان کے ملازم کا کہنا تھا کہ ڈرونز کی پروازوں کے دوران وہ موجود نہیں تھے۔

یہ پڑھیں: گیٹ وک ایئرپورٹ: ڈرون سے ملنے والے فنگر پرنٹ کی مماثلت نہ ہوسکی

گلس یارک نے کہا کہ جوڑے کے ساتھ پیش آنے والے واقعے پر اور ان کے ساتھ ہونے والی زیادتی پر افسوس ہے جس پر معذرت کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے مرحلے پر تحقیقات کرنے کے بعد انہیں پولیس حراست سے رہا کردیا تھا اور وہ اب مشتبہ نہیں رہے ہیں۔

مزید پڑھیں: لندن: ڈرون اڑانے کے الزام میں گرفتار جوڑے کو عدم شواہد پر رہا کردیا گیا

واضح رہے کہ برطانوی پولیس نے گیٹ وک ایئرپورٹ پر ڈرونز اڑانے کے الزام میں 47 سالہ پاؤل گیئت اور 57 سالہ ایلائنی کرک کو گرفتار کیا تھا اور بعدازاں عدم شواہد کی بنا پر انہیں رہا کردیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ رن وے کے نزدیک ڈرونز دیکھے جانے کے بعد 19 اور 21 دسمبر کے دوران سینکڑوں پروازیں متاثر ہوئی تھیں جبکہ برطانوی پولیس نے ڈرون اڑانے والوں کی گرفتاری میں تعاون پر 50 ہزار پاؤنڈز کا انعام مقرر کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں