The news is by your side.

Advertisement

مجھے جنرل پاشا نے فون کرکے دھمکی دی تھی، جاوید ہاشمی

ملتان: مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا کہ مجھے جنرل پاشا نے فون کرکے کہا تھا کہ میں نواز شریف، چوہدری نثار ، خواجہ آصف اور آپکو نہیں چھوڑوں گا۔

کینٹ میں اپنی رہائش گاہ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مخدوم جاوید ہاشمی کا کہنا تھا کہ مشاہد ااہ خان کے بیان سے کوئی تعلق نہیں میری مشاہد اللہ خان سے کوئی بات نہیں ہوئی نہ ہی کبھی میں نے آئی ایس آئی پر الزام لگایا ان کا کہنا تھا کہ میں ہمیشہ کہتا تھا کہ ڈسگارنٹڈ ایلیمنٹ میں کسی کا نام نہیں جانتا تھا نہ ہی مجھے پتہ کا کہاں شازش تیار کی گئی اور کون بندے لے کر آیا۔

ان کا کہنا تھا کہ مجھے عمران خان نے بتایا تھا کہ چیف جسٹس اسمبلیوں کو تحلیل کر دیں گے او ر3 مہنے ٹیکنوکریٹس کی حکومت رہے کی بھر الیکشن ہوں گے اور ریٹائرڈ جرنیلوں نے دھرنے کا منسوبہ بنیا تھا ان باتوں پر میں ناراض ہو کر گھر آجاتا تھا تو عمران خان بیان تبدیل کر لیتے تھے۔

 انہوں نے کہا کہ میں ایجنسیوں کے قریب رہنے والا نہیں ہوں میری جو معلومات تھیں وہ تحریک انساف کی معلومات تھیں جو مجھے عمران خان اور جہانگیر ترین نے بتائیں تھیں۔

ایم کیو ایم کے مسئلہ پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں کہ سیاسی و عسکری قیادت اس کا حل نکالیں مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا کہ ایم کیو ایم کے استعفوں پر بھی سیاسی حل نکالنا چاہیئے پاکستان تحریک انصاف کو سینے سے لگا کر حق اختلاف رائے دینا چاہیئے اور ایم کیو ایم کو بھی۔

 انہوں نے کہا کہ نبیل گبول سے استعفی کیوں لیا گیا نائن زیرو میں الیکشن ایم کو ایم جیت گئی جو کہ سب کی ہار تھی انہوں نے کہا کہ صوبوں اور مرکز کی حکومتین اور عسکری قیادت کی چھوٹی غلطیوں کا خمیازہ قوم صدیوں بھگتتی ہے مشرقی پاکستان عوام کی نہیں بلکہ سیاسی و عسکری قیادت کی غلطوں سے ٹوٹا تھا ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں