The news is by your side.

Advertisement

جرمن شہریوں میں پناہ گزینوں کی مخالفت کے رجحان میں اضافہ

برلن: جرمن شہریوں میں پناہ گزینوں کی مخالفت کے رجحان میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے، 54.1 فیصد شہری جرمن میں موجود سیاسی پناہ کے درخواست گزاروں کے بارے میں منفی رائے رکھتے ہیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق جرمن فاؤنڈیشن فریڈرش ایبرٹ شٹفٹنگ (ایف ای ایس) کی ایک تازہ رپورٹ میں بتایا گیا کہ جرمنی میں انتہائی دائیں بازو کے عوامیت پسندوں کے نظریات معاشرے کے مرکزی دھارے میں بھی عام ہوچکے ہیں۔

اعداد و شمار کے مطابق ریکارڈ 54.1 فیصد جرمن شہری جرمنی میں موجود سیاسی پناہ کے درخواست گزاروں کے بارے میں منفی رائے رکھتے ہیں۔

ایف ایف ای ایس کی رپورٹ کے مطابق 2002 سے جرمنی میں دائیں بازو کی شدت پسندی سے متعلق سالانہ جائزہ رپورٹ جاری کررہا ہے، اس مرتبہ یہ رپورٹ بیلے فیڈ یونیورسٹی سے وابستہ ایک گروپ نے تیار کی ہے۔

مزید پڑھیں: جرمنی، پناہ گزینوں کے لیے نرم دل رکھنے والی خاتون میئرپرانتہا پسند چاقو بردارکا حملہ

یہ امر بھی اہم ہے کہ جرمنی اور یورپ میں پناہ گزینوں کے بحران کے آغاز سے قبل 2014 میں تیار کردہ رپورٹ میں 44 فی صد جرمن شہریوں نے تارکین وطن کے بارے میں منفی خیالات کا اظہار کیا تھا۔

سن 2016 میں بھی جب پناہ گزینوں کا بحران عروج پر تھا، پناہ گزین مخالف خیالات کے حامل جرمن شہریوں کی تعداد 50 فی صد کم تھی۔

یاد رہے کہ دو سال قبل چاقو بردار شخص نے پناہ گزینوں کے لیے آواز اُٹھانے والی خاتون ٹاؤن میئر پر چھرے کے وار کر کے زخمی کردیا تھا، حملہ آور کو جائے وقوعہ سے ہی حراست میں لے لیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں