The news is by your side.

Advertisement

سات افراد کے لئے ایئر بس طیارہ، جرمنی تنقید کی زد میں

برلن:افغانستان میں طالبان کے کنٹرول سنبھالنے کے بعد جرمنی نے اپنے شہریوں کو وطن واپس لانے کے لئے ایئر بس طیارے کو استعمال کرکے سب کو حیرت زدہ کردیا ہے۔

جرمن وزارت دفاع کے جانب سے جاری بیان کے مطابق کل رات جرمن ایئر فورس کے ایئربس (اے فور ڈبل زیرو ایم ) طیارے میں انسانوں کے ایک گروپ کو کابل سے ازبکستان کے دارالحکومت تاشقند پہنچایا گیا۔

ایئر بس طیارے کے زریعے تاشقند پہنچنے والے گروپ میں صرف سات افراد شامل تھے، جن میں پانچ جرمن شہری، ایک کسی اور یورپی ملک کا شہری اور ایک جرمن فوج یا پھر جرمن وزارت کا ملازم افغان شامل تھا۔

جرمنی کے اس ایئر آپریشن پر سخت تنقید بھی کی گئی، جس پر جرمن وزارت خارجہ نے تنقید کا جواب دینے کے بجائے کابل میں حامد کرزئی انٹرنیشنل ائیرپورٹ کی خطرناک صورتحال پر زور دیا۔

یہ بھی پڑھیں: روسی سفارت کاروں کا بال بھی بیکا نہیں ہوگا: طالبان

جرمنی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ ایئر پورٹ پر تشویشناک صورتحال کے باعث متوقع انخلاء کے لئے مزید جرمن شہریوں اور دیگر افراد کو جرمن فوج کی سکیورٹی کے بغیر ایئر پورٹ پر لانا ممکن نہیں تھا۔

وزارت دفاع اپنے بیان میں مزید کہا کہ جرمن فوجیوں کا ایک گروپ نئی انخلاء پروازوں کی تیاری کے لئے کابل میں موجود ہے۔

واضح رہے کہ عام شرائط میں ائیربس طیارے میں ایک سو چودہ مسافر سوار کئے جاتے ہیں لیکن اس نوعیت کے انخلا کے لئے طیارے میں ڈیرھ سو مسافر سوار کرنا ممکن ہوتا ہے۔

یاد رہے کہ ملک کے متعدد صوبوں پر قبضے کے بعد طالبان نے گذشتہ روز افغانستان کے دارالحکومت کابل کا بھی کنٹرول سنبھال لیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں