The news is by your side.

Advertisement

جرمنی: تارکین وطن کو ملک بدر کرنے کے خلاف شہری سڑکوں پر نکل آئے

لائپزگ: تارکین وطن کو جرمنی سے زبردستی ملک بدری کے خلاف سینکڑوں شہری سڑکوں پر نکل آئے اور حکومتی پالیسی کے خلاف نعرے بازی کی۔

تفصیلات کے مطابق جرمن شہر لائپزگ میں سینکڑوں افراد نے احتجاج کیا اس دوران پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں، جس کے باعث کئی افراد معمولی زخمی ہوئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمن حکام ملک میں ہونے والے جرائم میں مہاجرین کے ملوث ہونے کا الزاما عاید کرتے ہیں، جو ان کی ملک بدری کا سبب ہے۔

حال ہی میں جرمنی میں ایک شامی مہاجرین نے جرمن خاتون کو چاقو سے وار کرکے ہلاک کردیا تھا، جبکہ رواں سال کے آغاز میں بھی درجنوں افغان شہریوں کو ملک بدر کیا گیا ہے۔

لائپزگ میں سینکڑوں افراد نے ایک تارک وطن کی جبری ملک بدری کے خلاف مظاہرہ کیا جو پرتشدد رنگ اختیار کر گیا۔ جبکہ تیس افراد نے پولیس کی اس وین کو روکنے کی کوشش کی تھی، جس کے ذریعے تارک وطن کو ملک بدر کیا جا رہا تھا۔

اس دوران پولیس نے لاٹھی چارج کیا جبکہ مظاہرین نے پولیس کی جانب کانچ کی بولتیں پھینکیں۔

جرمنی: افغان مہاجرین کی ملک بدری جاری، مزید 14 افغان ملک بدر

خیال رہے کہ جرمنی میں افغان مہاجرین کی ملک بدری کا عمل جاری ہے، گذشتہ سال دسمبر میں ایسے مزید 14 افغان مہاجرین کو ملک بدر کر دیا گیا تھا جن کی پناہ کی درخواستیں مسترد کر دی گئی تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں