The news is by your side.

Advertisement

امریکا طالبان مذاکرات کی معطلی پر جرمنی کا ردعمل سامنے آگیا

برلن: امریکا اور افغان طالبان کے مابین جاری امن مذاکرات کی معطلی پر جرمنی کا ردعمل سامنے آگیا.

تفصیلات کے مطابق جرمنی نے امریکا کی جانب سے افغان طالبان کے ساتھ مذاکرات ختم کرنے کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔

جرمن وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا تھا کہ یہ اقدامات ناگزیر تھا، تاکہ واضح ہوسکے کہ امریکا امن معاہدے کے لیے ہر قیمت ادا کرنے کی لیے تیار نہیں۔

بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ حالیہ کابل حملوں کے ذریعے طالبان نے اپنی امن کی خواہش پر سوالات کھڑے کر دیے ہیں.

خیال رہے کہ گزشتہ دونوں جرمنی نے افغانستان میں جاری اپنے ایک تربیتی منصوبے کو ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے اہل کاروں کو واپس بلوا لیا تھا. اس فیصلہ کا سبب افغانستان میں امن کی بگڑتی ہوئی صورت حال بنی تھی.

مزید پڑھیں: افغان طالبان سے بات چیت مکمل طورپر ختم ہوچکی، ڈونلڈ ٹرمپ

خیال رہے کہ آج امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ افغان طالبان کے ساتھ جاری امن مذاکرات ختم ہو چکے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ امریکا ایک طویل عرصے سے وہاں تھا، اب افغان حکومت کو خود بھی ذمہ داریاں اٹھانا ہوں گی۔

ٹرمپ نے یہ عندیہ بھی دیا کہ وہ اب بھی اٹھارہ سال کی جنگ کا خاتمہ اور امریکی فوجیوں کا افغانستان سے انخلا چاہتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں