The news is by your side.

Advertisement

جرمنی: داعش سے تعلق کے شبے میں خاتون گرفتار

برلن : دہشت گرد تنظیم داعش کے تعلقات اور  شام میں دہشت گردانہ کارروائیوں میں ملوث ہونے کے شبے میں جرمن پولیس نے ایک خاتون کو گرفتار  کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق یورپی یونین کے رکن ملک جرمنی کے شہر کارلسرؤے میں پولیس نے جمعرات کے روز خفیہ اطلاعات پر کارروائی کرتے ہوئے عالمی دہشت گرد تنظیم داعش کی ایک خاتون رکن کو گرفتار کیا ہے جو شام میں حکومت کے خلاف دہشت گردانہ کارروائیوں میں ملوث رہی تھی۔

جرمن خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ پولیس کی جانب سے حراست میں لی جانے والی 31 سالہ خاتون پر شبہ ہے کہ وہ شام میں شدت پسندانہ کارروائیاں کرکے واپس آئی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی حکام نے مذکورہ خاتون کو تفیش کے سلسلے میں دوسری مرتبہ طلب کیا تھا، جس کے بعد اسے حراست میں لے لیا گیا۔

عدالت دستاویزات کے مطابق رواں برس پولیس نے گرفتار خاتون کی حراست میں لینے کے لیے عدالت سے وارنٹ جاری کرنے کی درخواست کی تھی تاہم عدالت نے پولیس کی درخواست کو یہ کہتے ہوئے مسترد کردیا تھا کہ محض ’شام میں داعش کے زیر قبضہ علاقوں میں رہائش کی بنیاد پر کسی کو گرفتار نہیں کیا جاسکتا‘۔

عدالتی دستاویزات میں بتایا گیا ہے کہ عدالت نے درخواست خارج ہونے کے بعد بھی پولیس کی تحقیقات جاری رہی، جس میں پتہ چلا کہ خاتون سنہ 2013 میں جرمنی سے شام گئی تھی جہاں اس نے داعش کے ایک دہشت گرد سے شادی بھی کرلی لی تھی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ اسی برس خاتون کا شوہر شدت پسندانہ کارروائیوں کے دوران ہلاک ہوگیا تھا۔ پولیس کا دعویٰ ہے کہ خاتون نے شوہر کی ہلاکت کے بعد ایک اور شادی کی تھی اور داعش کی جانب سے کیے جانے والے خودکش حملوں میں بھی ملوث تھی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمن پولیس نے ان ثبوتوں اور معلومات کی بنیاد پر عدالت سے وارنٹ گرفتاری جاری کروائے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں