Syria شام میں وحشیانہ بمباری،خواتین و بچوں سمیت 540سے زائد شہید martyrs
The news is by your side.

Advertisement

شام میں وحشیانہ بمباری،خواتین و بچوں سمیت 540سے زائد شہید

غوطہ: بشارالاسد اور روسی فوج کے طیاروں نے غوطہ کو کھنڈر میں بدل دیا، شامی شہرغوطہ میں سرکاری فوج کی ایک ہفتے سے جاری وحشیانہ بمباری میں اب تک 540 سے زائد افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں جن میں 121 بچے بھی شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق شامی حکومت کے فوجی دستوں اور فضائیہ کی جانب سے 18 فروری سے جاری بمباری میں جاں بحق افراد کی تعداد 540 ہوگئی ہے، جاں بحق ہونے والوں میں درجنوں خواتین اور معصوم بچے بھی شامل ہیں۔

روسی فوج کے طیاروں نے دہشت گردوں کو نشانہ بنانے کی آڑ میں معصوم بچوں سمیت پانچ سو چالیس سے زیادہ افراد شہید کردیئے، آگ برساتے جہازوں نے زندگی راکھ کردی۔

مشرقی غوطہ میں پچھلے ایک ہفتے سے جاری فضائی حملوں نے قیامت برپا کر رکھی ہے، عمارتیں ملبے کا ڈھیر بنی ہوئی ہیں، شیر خوار بچوں کی لاشیں اور ماؤں کی آہ و بکا بھی عالمی ضمیرنہ جھنجوڑ سکی۔

شامی صدر بشار الاسد روس کی پشت پناہی پر اپنے ہی لوگوں پر بموں کے گولے برسارہا ہے۔ سات روز سے جاری بمباری میں درجنوں بچوں سمیت پانچ سو چالیس سے زائد افراد شہید ہوچکے ہیں۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ نے ایک بار پھر عارضی جنگ بندی پر زور دیا ہے جبکہ روس اور شام پہلے ہی اقوام متحدہ کی تیس روزہ جنگ بندی کا مطالبہ مسترد کر چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں