The news is by your side.

Advertisement

وفاقی وزیرغلام سرور کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست خارج

اسلام آباد: وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرور کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست اسلام آباد ہائی کورٹ نے خارج کردی۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرور کو عہدے سے ہٹانے کے لیے درخواست دائر کی گئی تھی جسے اسلام آباد ہائی کورٹ نے خارج کردیا ہے۔

درخواست گزار نے موقف اختیار کیا تھا کہ وزیر کے پائلٹوں سے متعلق بیان سے ملک اور قومی ائیر لائن پی آئی اے کی ساکھ کو نقصان پہنچا۔

ہائیکورٹ نے حکم نامہ میں لکھا کہ عدالت بے جا مداخلت نہیں کرسکتی، عدالت وزیراعظم عمران خان کابینہ کے اقدامات کے خلاف نہیں جاسکتی۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے 8 صفحات پر مشتمل محفوظ فیصلہ سنادیا۔

خیال رہے کہ 26 جون کی اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر ہوابازی غلام سرور نے کہا تھا کہ مختلف ائیرلانینز کے مشکوک لائسنس کے حامل پائلٹس کو جہاز اڑانے سے روک دیا ہے۔

انہوں نے کہا تھا کہ کپتانوں کو گراؤنڈ کرنے پر جو بھی مشکلات آئیں گی، ان کا سامنا کرنے کو تیار ہیں۔ دنیا بھر کی ائیرلائینز نے کپتانوں کو نوکریوں سے نکالا ہے۔ ہمارے پاس پائلٹس کی کمی نہیں ہو گی۔

غلام سرور کا کہنا تھا کہ قومی ائیرلائن (پی آئی اے) کی تمام بھرتیاں پچھلے ادوار میں ہوئی ہیں۔ جن پائلٹس کے خلاف انکوائری ہوئی، ان کی تعیناتی 2018 سے پہلے کی ہے۔ 2018 کے بعد پی آئی اے میں نئی بھرتی نہیں ہوئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں