The news is by your side.

Advertisement

حاصل بزنجو را اور ملک دشمنوں کی زبان بولتے ہیں، غلام سرور خان

سینیٹ انتخابات میں جہانگیرترین کاکوئی کردارنہیں تھا

اسلام آباد : وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرورخان نے کہا حاصل بزنجو رااورملک دشمنوں کی زبان بولتے ہیں ، 14 سینیٹرز کوخراج تحسین پیش کرتاہوں ،سینیٹ انتخابات میں جہانگیرترین کاکوئی کردارنہیں تھا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرورخان نے میڈیا سے گفتگو میں کہا فیڈریشن پر ضرب لگانے کی ناکام کوشش کی گئی تھی، سینیٹ میں چاروں کی صوبے کی برابر نمائندگی ہے ، کہتے تھے اسپیکرقومی اسمبلی کیخلاف تحریک لائیں گے تو لاتے ، نہوں نے کہا بجٹ منظور نہیں ہونے دیں گے ، بجٹ منظور ہوگیا۔

غلام سرورخان کا کہنا تھا کہ 25 جولائی کی کال دی لیکن ایک پلیٹ فارم پر نہیں تھے ، اپوزیشن کی پہلے بھی ساری تحریکیں ناکام ہوئی اب بھی ہوئیں، سینیٹرز نے خفیہ بیلٹ پر اپنے ضمیر کےمطابق فیصلہ کیا۔

14 سینیٹرز کو اپنے ضمیر کےمطابق فیصلہ کرنے پر خراج تحسین پیش کرتاہوں

وفاقی وزیر ہوا بازی نے کہا کہ میں کہتاہوں کوئی ہارس ٹریڈنگ نہیں ہوئی، 14 سینیٹرز کوخراج تحسین پیش کرتاہوں، فیڈریشن کے خلاف جو تحریک تھی اسے ناکام بنایا۔

ان کا کہنا تھا حاصل بزنجو رااورملک دشمنوں کی زبان بولتےہیں، میرحاصل بزنجو کے بیان پردکھ ہوا، ایسے لوگوں پر غداری کا مقدمہ بننا چاہیے، حاصل بزنجو نے بھارت کے مؤقف کی تائید کی، مذمت کرتا ہوں۔

سینیٹ انتخابات میں جہانگیرترین کاکوئی کردارنہیں تھا

وفاقی وزیر نے کہا انتخابات شفاف ہوئےہیں کوئی ہارس ٹریڈنگ نہیں، لوگوں کی پگڑیاں اتاری جارہی ہیں ایسا نہیں ہوناچاہیے، لوگوں نے اپنے ضمیر کے مطابق ووٹ دیا، چیئرمین سینیٹ کا کردار غیر جانبدار تھا۔

غلام سرورخان کا کہنا تھا کہ سینیٹرزاپنی جماعتوں کےساتھ کھڑےہوئےلیکن ووٹ اپنی مرضی سےدیا، جس نےووٹ دیااپنےضمیرکےمطابق دیا، سینیٹ الیکشن میں کوئی ہارس ٹریڈنگ نہیں ہوئی، انتخابات میں جہانگیرترین کاکوئی کردارنہیں تھا۔

مولاناصاحب میں سیاسی طاقت ہوتی توسیٹ بچالیتے

انھوں نے مزید کہا کہ ہم کسی سےکوئی خطرہ محسوس نہیں کرتے، مولاناصاحب میں سیاسی طاقت ہوتی توسیٹ بچالیتے، تاریخ میں پہلی بارتحریک انصاف نےقبائلی اضلاع کی بات کی، جمہوریت کے چیمپئن فاٹا کو پاکستان کاحصہ نہیں بناسکے، مولانا صاحب کےمدارس میں غریبوں کے بچے پڑھتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں