The news is by your side.

Advertisement

ٹک ٹاک پر نیا چیلنج : دس سالہ بچی کی موت کا سبب بن گیا

روم : ٹک ٹاک پر گیمز کا جنون ایک اور  ننھی سی جان لے گیا،  اٹلی کی دس سالہ بچی چیلنج  پورا کرنے کوشش میں گلا گھٹنے سے فوری طور پر ہلاک ہوگئی۔

اٹلی کے شہر پیلرمو کے اسپتال میں بےہوشی کی حالت میں آنے والی بچی کو ڈاکٹروں نے مردہ قرار دے دیا، ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ بچی کا گلہ اس حد تک دب گیا تھا کہ اس کا اثر اس کے دل پر پڑا۔ ڈاکٹرز کے مطابق بچی کو بچانے کی پوری کوشش کرنے کے باوجود وہ زندہ نہ رہ سکی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ٹک ٹاک بلیک آؤٹ چیلنج کو پورا کرنے کی کوشش میں دس سالہ بچی نے حادثاتی طور پر خود کو ہلاک کرلیا، اطالوی بچی نے سوشل میڈیا ویڈیو کے لئے بیلٹ سے اپنا گلا گھونٹ لیا۔

اسپتال میں متوفی بچی کے والدین بیٹی اس درد ناک موت کی خبر سن پر غم سے نڈھال ہوگئے، انہوں نے بیٹی کی موت کے بعد اسپتال انتظامیہ کو اس کے جسمانی اعضاء عطیہ کرنے کی اجازت دے دی ہے۔

واضح رہے کہ بلیک آؤٹ چیلنج گزشتہ ایک سال سے ٹک ٹاک سمیت سوشل میڈیا کے مختلف پلیٹ فارمز  پر  تیزی سے گردش کررہا ہے، فی الحال اسے ٹک ٹاک پر سب سے زیادہ کھیلا جانے والا چیلنج سمجھا جاتا ہے۔

اس کھیل کو “بیہوشی کا کھیل” ، “گھٹن کا کھیل” یا ” اسپیڈ ڈریمنگ” کے نام سے بھی جانا جاتا ہے ، اس چیلینج کے تحت صارفین خود کو کچھ سیکنڈ کے لئے خطرناک اسٹنٹ سے گزارتے ہیں۔

یاد رہے کہ اس سے قبل بلو وہیل، پب جی اور اسی طرح کے خطرناک اور جان لیوا کھیلوں نے بھی پوری دنیا میں متعدد نوجوانوں کی جان لی تھی۔

اس حوالے سے ماہرین نے صارفین خصوصاً نوجوانوں کے والدین کو ان آن لائن چیلنجز سے وابستہ خطرات سے خبردار کیا ہے، جن میں بیہوشی، دورے، دماغ کو نقصان اور یہاں تک کہ موت بھی شامل ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں