The news is by your side.

کراچی : 10سالہ بچی کا زیادتی کے بعد سفاکانہ قتل

کراچی : شہر قائد میں 10سالہ دعا کو زیادتی کے بعد گلا گھونٹ کر قتل کردیا گیا، پولیس نے والد کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں ایک اور بچی جنسی درندگی کا نشانہ بن گئی ، کشمیر کالونی میں 10 سالہ دعا فاطمہ کو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا۔

دعا سے زیادتی کے بعد قتل کے معاملے پر پولیس نے محمود آباد تھانے میں والد کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا، مقدمہ قتل اور زنا کی دفعات کے تحت درج کیا گیا۔

والد نے بیان دیتے ہوئے بتایا کہ میں سوزوکی ڈرائیور ہوں ، میں حسب معمول اپنی سوزوکی گھر سے 12بجے کام پر نکلا تھا،2 بجے مجھے گھر سے میرے بیٹے کا فون آیا گھر پر مسئلہ ہوا ہے آپ جلدی آئیں۔

بچی کے والد کا کہنا تھا کہ اسپتال پہنچا تو میری 10سالہ بیٹی دعا مردہ حالت میں تھی، دعا دوپہر 1 بجے ذیشان کو کھانا دینے گئی اور آدھے گھنٹے تک واپس نہیں آئی۔

ایف آئی آر متن کے مطابق میری بیوی کو فکر ہوئی اور وہ اوپر گئی، والد نے بتایا کہ کمرے میں دیکھا تو بچی مردہ حالت میں سیڑھیوں پر پڑی تھی، ذیشان کمرے کے اندر موجود تھا۔

جس کے بعد اہلیہ نے شور شرابہ شروع کردیا، اسی دوران لوگ جمع ہوگئے اور بچی کو فوری طور پر جناح اسپتال پہنچایا۔

ڈاکٹر نے دعا کے مردہ ہونے کا بتایا اور پوسٹ مارٹم میں زیادتی کی تصدیق کی، ذیشان احمد نے میری بیٹی دعا فاطمہ کو زیادتی کا نشانہ بنا کے گلا گھونٹ کر قتل کردیا، ذیشان کیخلاف قتل اور زیادتی کے تحت قانونی کاروائی کی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں