The news is by your side.

Advertisement

سینکڑوں میٹر بلندی پر بنے شیشے کے پل پر دل دہلا دینے والا حادثہ

چین میں سیاحوں میں مقبول شیشے کے پل جو پہاڑوں کے درمیان نہایت اونچائی پر بنائے جاتے ہیں، یوں بھی صرف باہمت سیاحوں کے لیے ہی ہیں لیکن حال ہی میں وہاں ہونے والے ایک حادثے نے لوگوں کے دل دہلا دیے۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق چین میں بنائے گئے مقبول لیکن نہایت خطرناک سیاحتی مقام پر ایک بھیانک حادثہ پیش آیا، اونچائی پر بنے شیشے کے پل پر ایک سیاح اس وقت پھنس گیا جب اس کے شیشے اچانک ٹوٹ گئے۔

شمال مشرقی چین کے صوبہ جیلین میں اس جھولتے پل کا شیشے سے بنا فرش اچانک چکنا چور ہوگیا۔ لونگ جیانگ نامی شہر میں 100 میٹر بلندی پر واقع اس پل پر سیاح نیچے کا نظارہ دیکھ رہا تھا جب اچانک تند و تیز ہوا چلنا شروع ہوگئی۔

150 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی تند و تیز ہوا کے نتیجے میں پل کے متعدد گلاس پینل ٹوٹ گئے اور سیاح درمیان میں پھنس گیا۔ اس سیاح کو فائر فائٹرز، پولیس اور مقامی حکام نے ڈیڑھ گھنٹے کی جدوجہد کے بعد وہاں سے نکالا۔

چینی سوشل میڈیا پر شیئر کی گئی تصاویر میں ایک شخص کو دکھایا گیا ہے جو پل کی سائیڈ کو پکڑے کھڑا ہے جبکہ اس کے ارگرد شیشے کے پینل ٹوٹ چکے ہیں اور وہاں سے خلا نظر آرہے ہیں۔

حادثے میں نامعلوم سیاح کو کوئی نقصان نہیں پہنچا مگر اسپتال میں اس کا مکمل طبی معائنہ ہوا۔

چینی سوشل میڈیا پر لوگوں نے اس واقعے کو بھیانک خواب قرار دیا۔ ایک شخص نے لکھا کہ حالیہ برسوں میں متعدد گلاس برج تعمیر ہوئے ہیں اور سیاحوں میں مقبول بھی ہیں، مگر ہم کس طرح ان کے محفوظ ہونے کی یقین دہانی کروا سکتے ہیں؟

چین میں اس طرح کے پل سیاحوں میں بہت زیادہ مقبول ہیں جن میں صوبہ ہونان میں واقع 430 میٹر کا پل سب سے زیادہ مشہور ہے جو ایک کھائی کو عبور کرنے کے لیے بنایا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں