site
stats
دہشت گردی

پاکستان سب سے زیادہ دہشت گردی کا شکار ممالک میں سے ایک

لندن: پاکستان دنیا بھر میں سب سے زیادہ دہشت گردی کا شکار 5 ممالک میں سے ایک بن گیا ہے۔ پاکستان کی درجہ بندی بدترین خانہ جنگیوں اور انسانی المیوں کا شکار عراق اور شام کے ساتھ کی گئی ہے۔

عالمی شماریہ برائے دہشت گردی جی ٹی آئی کی جارہ کردہ فہرست کے مطابق سنہ 2015 میں دنیا بھر میں دہشت گردی کے واقعات میں 29 ہزار 376 اموات ہوئیں۔ ان اموات میں وہ اموات بھی شامل ہیں جو شدت پسند تنظیموں جیسے داعش اور بوکو حرام کے خلاف کی جانے والی کارروائیوں کے دوران ہوئیں۔

ملک بھر کے حساس اور عسکری اداروں پر ہونے والے دہشت گرد حملے *

فہرست کے مطابق ان اموات کی مجموعی تعداد کا 72 فیصد حصہ پاکستان، عراق، افغانستان، نائجیریا اور شام میں ریکارڈ کیا گیا جو بدترین دہشت گردی کا شکار ممالک قرار پائے۔

gti-3

جی ٹی آئی نامی یہ فہرست امریکی ریاست میری لینڈ کی یو ایس یونیورسٹی کی جانب سے قائم کردہ ایک کنسورشیم کی جانب سے جاری کی گئی ہے۔

فہرست میں امریکا 36 ویں، فرانس 29 ویں، روس 30 ویں اور برطانیہ 34 ویں نمبر پر موجود ہے۔

فہرست میں دہشت گردی سے عالمی معیشتوں کو پہنچنے والے نقصان کا اندازہ بھی لگایا گیا جس کی مالیت 89.6 بلین ڈالر سامنے آئی۔ نقصان میں سرفہرست عراق ہے جس کی مجموعی ملکی پیداوار میں 17 فیصد کمی آئی۔

gti-2

اسی طرح تنظیم برائے معاشی شراکت اور ترقی او ای سی ڈی میں شامل ممالک میں داعش اور بوکو حرام جیسی تنظیموں کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں جس سے ان کو شدید نقصان کا سامنا بھی کرنا پڑ رہا ہے تاہم اس کے باوجود وہ دہشت گردانہ حملے کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

کوئٹہ میں ہونے والے دہشت گردی کے بڑے واقعات *

رپورٹ کے مطابق ان تنظیموں کی جانب سے کیے گئے حملوں میں ہونے والی اموات کے تناسب میں گزشتہ برس کے مقابلے میں 650 فیصد اضافہ ہوگیا ہے۔ رپورٹ میں داعش کو سب سے خطرناک تنظیم قرار دیا گیا جس نے 252 شہروں کو اپنا نشانہ بنایا اور نتیجے میں 6 ہزار 141 افراد ہلاک ہوئے۔

فہرست میں مجموعی طور پر 23 ممالک کو دہشت گردی سے متاثر ممالک قرار دیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top