The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں کاروبار کرنے والوں کے لیے خوشخبری

ریاض: سعودی حکومت کی جانب سے ملک کے بڑے شہروں میں 24 گھنٹے تجارتی سرگرمیوں کے فیصلے کو یکم جنوری 2020 سے نافذ العمل کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق یکم جنوری سے سعودی عرب کے بڑے شہروں میں دکانیں اور کاروباری مراکز بغیر کسی وقفے کے 24 گھنٹے کھولے جاسکیں گے۔

وزارت داخلہ کے مطابق رات 12 بجے کے بعد تجارتی سرگرمیوں کو جاری رکھنے کے لیے دکان کی زیادہ سے زیادہ فیس ایک لاکھ ریال مقرر کی گئی ہے جبکہ مختلف مصنوعات پر الگ الگ فیسوں کی تفصیلات جلد جاری ہوں گی۔

سعودی وزارت داخلہ کے مطابق کاروباری مرکز پر سی سی ٹی وی کیمرے نصب کیے جائیں تاکہ اسے 24 گھنٹے کام کرنے کا لائسنس جاری کیا جاسکے اور ورکرز سے معمول کے اوقات سے زائد ڈیوٹی نہ لی جائے۔

وزارت بلدیات و دیہی امور نے واضح کیا کہ فارمیسیاں، شادی ہال، ریسٹ ہاؤس، طبی سرگرمیاں، تعلیمی سرگرمیاں، پیٹرول پمپ، ہوٹل اور ریزورٹس کو کاروبار کی فیس سے استثنیٰ دیا گیا ہے۔

وزیر بلدیات ماجد القصبی نے کہا کہ اس فیصلے سے صارفین اور کاروباری طبقے دونوں کو فائدہ پہنچے گا، سرمایہ کاری میں اضافہ ہوگا اور ملکی معیشت کو آگے بڑھنے میں مدد ملے گی۔

واضح رہے کہ 24 گھنٹے کاروباری سرگرمیوں کی اجازت ملنے سے سیاحت، نقل وحمل اور مواصلات، مقامی مصنوعات کی طلب میں اضافے کے ساتھ ساتھ روزگار کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں