The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں مقیم غیرملکیوں کے لیے خوشخبری

ریاض: سعودی وزارت تعلیم نے مملکت میں مقیم غیرملکیوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے بچوں کے فنکر پرنٹس جوازات (محکمہ پاسپورٹ) کے سسٹم میں فیڈ کروائیں۔

عرب میڈیا کے مطابق وزارت تعلیم کی جانب سے جاری کردہ نوٹفکیشن میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب میں مقیم غیرملکی جن کے بچے 6 برس یا اس سے زائد عمر کے ہیں انہیں چاہئے کہ فوری طور پر جوازات کے سسٹم میں بچوں کے فنگر پرنٹ جمع کرادیں۔

واضح رہے کہ سعودی عرب میں تمام غیرملکیوں کے فنگر پرنٹ سسٹم میں فیڈ کروانا لازمی ہے، اس حوالے سے جوازات کی جانب سے مختلف شہروں میں فنگر پرنٹ جمع کروانے کے لیے ذیلی دفاتر میں بھی سہولت فراہم کی گئی ہے۔

جوازات کے دفتر میں فنگر پرنٹ دینے کے لیے ابشر اکاؤنٹ سے وقت حاصل کرنے کے بعد مقررہ وقت پر دفتر جایا جاسکتا ہے۔

حکام کے مطابق فنگر پرنٹ کے لیے بچوں کا اقامہ اور پاسپورٹ درکار ہوتا ہے اس ضمن میں جوازات نے بچوں کے فنگر پرنٹ کے لیے کم از کم عمر کی حد 6 برس رکھی ہے۔

نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ سسٹم میں فنگر پرنٹ جمع نہ ہونے کی صورت میں بچوں کے اقامے اور تعلیمی معاملات میں دشواری پیش آسکتی ہے اس لیے تارکین اپنے بچوں کے فنگرپرنٹ فوری طور پر جوازات کے متعلقہ شعبے میں جمع کروائیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں