The news is by your side.

Advertisement

اب نابینا افراد کہیں بھی بغیر خطرے کے اکیلے جا سکتے ہیں

نابینا افراد کے لیے گوگل کا شاندار اقدام

نیویارک: انٹرنیٹ کی دنیا میں منفرد اور اہم شناخت بنانے والی کمپنی گوگل نے قوتِ بصارت یا کمزور بینائی کے افراد کے لیے بڑا قدم اٹھا لیا۔

تفصیلات کے مطابق گوگل نے اپنی راستے کی آگاہی دینے والی ایپلیکشن (گوگل میپ) میں نئے فیچر شامل کیے جو نابینا یا کمزور بینائی رکھنے والے افراد کے لیے کارآمد ہیں۔

ایپ میں گوگل نے مزید نئی آوازیں شامل کیں جو آنکھوں کے متاثرہ صارفین کو راستے کے حوالے سے معلومات کی رسائیں دیں گی۔ رپورٹ کے مطابق گوگل میپ میں شامل ہونے والے نئے فیچر صارفین کو بتائیں گے کہ وہ کہاں موجود ہیں اور جس مقام پر وہ جانا چاہتے ہیں تو اس کے لیے اضافی احتیاط کے حوالے سے کیا اقدامات کیے جائیں۔

رپورٹ کے مطابق گوگل میپ میں شامل کی جانے والی نئی آوازیں متاثرہ افراد کو کسی بھی نئی جگہ پر اعتماد کے ساتھ چلنے میں مدد فراہم کریں گی اور انہیں پیدل چلتے وقت موڑ کے بارے میں قدموں کی تعداد سے آگاہ کیا جائے گا۔

مزید پڑھیں: غیرقانونی طریقے سے بچوں کی ویڈیو حاصل کرنے پر گوگل کو بھاری جرمانہ عائد

اگر کسی بھی قسم کا خطرہ ہوگا تو ایپ کے ذریعے انہیں جگہ فوری چھوڑنے کی ہدایت نوٹی فکیشن کی صورت میں جائے گی، اسی طرح اگر کوئی شخص غلط سمت کی طرف جائے گا اور ایپ اُسے واپس درست راستے پر لائے گی۔

بینائی سے محروم گوگل کے ملازم واکانا سوگیامہ کا کہنا تھا کہ ’’گوگل میپ میں شامل ہونے والی اضافی آواز کے ذریعے ملنے والی رہنمائی سے زندگی بے حد آسان ہوگئی، اب میں مزید آسانی کے ساتھ اپنی منزل پر پہنچ جاتا ہوں۔

گوگل کے مطابق یہ سروس فی الوقت آزمائش کے لیے امریکا اور جاپان میں متعارف کرائی گئی البتہ کامیاب تجربے کے بعد اسے دنیا بھر میں پیش کردیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں