The news is by your side.

Advertisement

حکومت اور جے یو آئی کے مذاکرات تعطل کا شکار ہو گئے ہیں: احسن اقبال

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہا ہے حکومت اور جے یو آئی ف کے درمیان ہونے والے مذاکرات تعطل کا شکار ہو گئے ہیں۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ اب اپوزیشن کی رہبر کمیٹی میں طے ہوگا کہ حکومت کے ساتھ مذاکرات کرنے ہیں یا نہیں، مذکرات کرنے کا اعلان رہبر کمیٹی کرے گی۔

رہنما ن لیگ کا کہنا تھا حکمران انتہائی غیر سنجیدہ ہیں، حکومتی ٹیم جب تک کوئی سنجیدہ پیش کش نہیں کرتی، مذاکرات شروع نہیں ہوں گے۔

ادھر رہبر کمیٹی نے مذاکرات سے متعلق اہم فیصلے کے لیے کل رات 8 بجے اجلاس طلب کر لیا ہے، واضح رہے کہ رہبر کمیٹی کا پہلا اجلاس 22 اکتوبر کو طلب کیا گیا تھا، تاہم اپوزیشن رہنماؤں کی مصروفیت کی وجہ سے اجلاس کی تاریخ تبدیل کی گئی۔

یہ بھی پڑھیں:  شہبازشریف نے آزادی مارچ میں شرکت بلاول بھٹو کی شمولیت سے مشروط کردی

رہبر کمیٹی کے اجلاس میں حکومت سے مذاکرات کا فیصلہ ہوگا، احسن اقبال کا کہنا ہے کہ اب کمیٹی ہی طے کرے گی کہ حکومت کے ساتھ مذاکرات کے لیے جانا ہے یا نہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے آزادی مارچ میں شرکت بلاول بھٹو کی شمولیت سے مشروط کر دی تھی، شہباز شریف نے واضح کیا کہ بلاول بھٹو کے نہ ہونے پر احسن اقبال قیادت کریں گے، پیپلز پارٹی کی دوسرے درجے کی قیادت کے ساتھ کھڑا نہیں ہو سکتا۔

خیال رہے کہ حکومتی مذاکراتی کمیٹی نے جے یو آئی (ف) سے پہلا باضابطہ رابطہ کل کیا ہے، چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے عبدالغفور حیدری کو ٹیلی فون کر کے ملاقات کا وقت طے کیا تھا، مذاکراتی کمیٹی آج رات 8 بجے عبدالغفور حیدری سے ملاقات کرے گی، یہ ملاقات پارلیمنٹ لاجز میں عبدالغفور حیدری کی رہایش گاہ پر ہوگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں