زرمبادلہ ذخائر میں کمی، حکومت نے23کروڑ ڈالر کے نئےقرضے لےلئے -
The news is by your side.

Advertisement

زرمبادلہ ذخائر میں کمی، حکومت نے23کروڑ ڈالر کے نئےقرضے لےلئے

اسلام آباد : زرمبادلہ ذخائرکی مقررہ حد برقرار رکھنے کیلئے حکومت نے مزید قرضے لے لئے، حکومت نے رواں مالی سال میں تئیس کروڑ ڈالر کے نئے قرضے حاصل کئے۔

تفصیلات کے مطابق زرمبادلہ ذخائر میں کمی کے بعد حکومت نے مزید قرضوں کے انبار لگا دیئے، تیل درآمدات کیلئے اسلامک ڈیویلپمنٹ بینک سے بھی قرضہ لے لیا گیا، قرضے کا حجم سات کروڑ ستر لاکھ ڈالر ہے۔

یہ رقم بینک براہ راست تیل بیچنے والے ملک کو دئیے جائیں گے، پاکستان سعودیہ عرب سے تیل برآمد کرتا ہے۔

حکومت کا رواں مالی سال آئی ڈی بی سے میں ایک ارب پچپن کروڑ ڈالر کے قلیل مدتی قرضے لینے کا پلان ہے، اسکےعلاوہ زرمبادلہ ذخائر میں جاری مسلسل کمی کو روکنے کیلئے حکومت نے غیرملکی بینک سے پندرہ کروڑ تیس لاکھ ڈالر کا قرضہ لیا۔

قرض کی رقم اگست میں پاکستان کو موصول ہوئی۔


مزید پڑھیں : ملکی زرمبادلہ ذخائر2سال کی کم ترین سطح پر آگئے


یاد رہے کہ رواں سال کے آغاز سے اب تک ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں 4 ارب ڈالر کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے، اس وقت ملکی زرمبادلہ ذخائر کا حجم 14 ارب 37 کروڑ ڈالر کی سطح پر ہیں جبکہ قرضوں کی ادائیگیوں کے بعد ملکی زر مبادلہ کے ذخائر میں مزید کمی متوقع ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں