The news is by your side.

Advertisement

حکومت کا نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا بڑا فیصلہ

نوازشریف آئندہ ہفتے بیرون ملک روانہ ہو سکتے ہیں

اسلام آباد : حکومت نے سابق وزیراعظم نواز شریف کا نام ای سی ایل سےنکالنے کا فیصلہ کرلیا ہے ، وزیراعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق نے کہا ہے کہ نوازشریف کی راہ میں کوئی رکاوٹ نہیں ڈالیں گے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت کی جانب سے سابق وزیراعظم نواز شریف کا نام ای سی ایل سے ہٹانے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے ، ذرائع وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ نوازشریف کا نام 48 سے 72 گھنٹوں میں ای سی ایل سے نکال دیا جائے گا، وہ آئندہ ہفتے بیرون ملک روانہ ہو سکتے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف کو ایئر ایمبولینس میں بیرون ملک لے جایا جاسکتا ہے، ان کے لئے ایئر ایمبولینس کی ضرورت پڑی تو درخواست کی جائے گی۔

دوسری جانب وزیراعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو میں اس بات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا حکومت کو غور کرنے کی ضرورت نہیں ہے، حکومت کا شروع سے مؤقف رہا ہے کہ نواز شریف کو باہر جاکر علاج کرانا چاہیے۔

نعیم الحق کا کہنا تھا کہ نوازشریف کی راہ میں کوئی رکاوٹ نہیں ڈالیں گے، عدالت کا نوازشریف کے معاملے پر جو فیصلہ ہوگا حکومت قبول کرے گی، نواز شریف کا ہم عمر ہوں ،خود بھی علیل اوراسپتال میں زیر علاج ہوں، نوازشریف جلدی سے باہر جائیں، علاج کرائیں اور واپس آئیں۔

مزید پڑھیں : نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست وزارت داخلہ کو موصول

یاد رہے سابق وزیراعظم نواز شریف نے نام ای سی ایل سے نکالنے کیلئے درخواست دی تھی، درخواست نواز شریف کی فیملی کی جانب سے بیماری اور بیرون ملک علاج کرانے کی بنیاد پر دی گئی تھی ، درخواست میں کہا گیا تھا کہ نوازشریف بیرون ملک علاج کے لئے جانا چاہتے ہیں۔

گذشتہ روز مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا تھا کہ نوازشریف کے پلیٹ لیٹس گر گئے ہیں اور ان کی حالت انتہائی تشویشناک ہے، بار بار پلیٹ لیٹس کم ہونےکی وجہ معلوم نہیں ہورہی، نوازشریف کےعلاج کے لئے دستیاب سہولتیں استعمال کی جا رہی ہیں۔

دو روز قبل سابق وزیراعظم نوازشریف کو سروسز اسپتال سے ڈسچارج کردیا گیا تھا ، جس کے بعد انھیں شریف میڈیکل کمپلیکس منتقل کرنا تھا تاہم انھیں جاتی امرا پہنچا دیا گیا تھا، جہاں ان کیلئے ڈاکٹر عدنان کی زیرنگرانی انتہائی نگہداشت یونٹ قائم کیاگیا تھا، جس میں وینٹی لیٹر اورکارڈیک کی سہولیات موجود ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں