The news is by your side.

Advertisement

کیا نواز شریف کو جیل واپس بھجوایا جا رہا ہے؟ اسپتال کے دروازے کس نے بند کیے؟

لاہور: ترجمان پنجاب حکومت نے سابق وزیرِ اعظم نواز شریف کے واپس جیل بھجوائے جانے کے سلسلے میں خاموشی توڑ دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت کے ترجمان شہباز گل نے کہا ہے کہ نواز شریف کے واپس جیل بھجوائے جانے کا ابھی فیصلہ نہیں ہوا۔

نواز شریف کو اسپتال سے کسی بھی جگہ منتقل کرنے کا حکم نہیں ملا۔

سربراہ میڈیکل بورڈ

شہباز گل نے بتایا کہ نواز شریف کے حالیہ ٹیسٹوں کی رپورٹ موصول ہو گئی ہے، سابق وزیرِ اعظم کے مستقبل کا فیصلہ ٹیسٹ رپورٹس کو مدِ نظر رکھتے ہوئے ہوگا۔

دوسری طرف نواز شریف کی علاج کے لیے قائم کیے گئے میڈیکل بورڈ کے سربراہ نے بھی کہا ہے کہ نواز شریف کو اسپتال سے کسی بھی جگہ منتقل کرنے کا انھیں کوئی حکم نہیں ملا ہے۔

سربراہ میڈیکل بورڈ پروفیسر محمود ایاز نے بتایا کہ نواز شریف کو منتقل کرنے سے قبل ڈسچارج سلپ بنائی جائے گی، جیسے ہی جیل حکام کی جانب سے نوٹس ملتا ہے، ڈسچارج سلپ بنادی جائے گی۔

گیٹ بند ہونا معمول کی بات ہے۔

ایم ایس سروسز اسپتال

پروفیسر محمود ایاز کا کہنا تھا کہ نواز شریف کو منتقل کرنے سے پہلے ڈاکٹرز کو بھی آگاہ کیا جائے گا، سروسز اسپتال میں تا حال سیکورٹی کے سخت انتظامات ہیں۔

ادھر سروسز اسپتال کے دروازے بند کرنے سے متعلق اسپتال کے ایم ایس نے مؤقف دیا ہے کہ چھٹی کی وجہ سے گیٹ نمبر 2 بند کیا گیا ہے۔

ایم ایس سروسز اسپتال نے کہا کہ ایمرجنسی کا گیٹ ہی کھلا ہوا ہے، گیٹ بند ہونا معمول کی بات ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں