The news is by your side.

Advertisement

حکومتی معاشی اقدامات : پہلی سہ ماہی میں کھاتوں کا خسارہ 64 فیصد کم ہوگیا

کراچی : اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے اپنی سہ ماہی رپورٹ میں کہا ہے کہ ستمبر2019میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ25 کروڑ ڈالر رہا جو اگست2019سے35کروڑ ڈالر کم ہے۔

اسٹیٹ بینک کی رپورٹ کے مطابق ستمبر2019میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ25 کروڑڈالررہا، ماہ ستمبر کا خسارہ اگست سے35کروڑ ڈالرکم رہا۔

مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ1.54ارب رہا جبکہ مالی سال19 کی پہلی سہ ماہی کاخسارہ4.28ارب ڈالر تھا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ63 فیصد کم ہے، تین ماہ میں تجارتی خسارہ تقریباً4.99ارب ڈالر ہے۔

یہ تجارتی خسارہ سوا 3ارب ڈالر کم ہوا ہے، تین ماہ میں خدمات کاخسارہ1.20ارب ڈالر رہا،اسٹیٹ بینک کے مطابق تین ماہ میں آمدن کا خسارہ1.48ارب ڈالر رہا،جس میں تجارت، خدمات اور آمدن کاخسارہ7.68ارب ڈالر رہا۔

اس کے علاوہ سیکنڈری آمدن کے کھاتوں میں6 ارب 13کروڑ ڈالر آئے اور خسارے کی فنانسنگ کے لئے1.44ارب ڈالر قرض لیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں