The news is by your side.

Advertisement

حکومت کا چھوٹی صنعتوں کو ٹیکس مراعات دینے پر غور

وزیر اعظم کی ایک ہفتے میں ایس ایم ایز کے فروغ کے لیے ایکشن پلان پیش کرنے کی ہدایت

اسلام آباد: حکومت نے چھوٹی صنعتوں اور تعمیراتی شعبے کے فروغ اور بحالی پر غور شروع کر دیا ہے، اس سلسلے میں وزیر اعظم عمران خان نے ایک ہفتے میں ایس ایم ایز کے فروغ کے لیے مکمل ایکشن پلان پیش کرنے کی ہدایت کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق آج وزیر اعظم کی زیر صدارت بنی گالہ میں حکومت کی معاشی ٹیم کا اجلاس منعقد ہوا، جس میں مشیر خزانہ، مشیر تجارت، مشیر اصلاحات، چیئرمین ایف بی آر، چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ سمیت وفاقی وزرا نے شرکت کی۔

اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ ہماری اولین ترجیح معاشی نظام کو مستحکم بنیادوں پر چلانا ہے، اس سے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے، سرمایہ کاروں کا اعتماد بڑھے گا اور مقامی صنعتوں کو فروغ ملے گا۔

اجلاس میں وزیر اعظم کو معاشی ٹیم نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ تعمیرات سیکٹر اور صنعتوں کو جلد ٹیکس مراعات دیے جائیں گے۔ اجلاس میں اسٹیل اور سیمنٹ کی صنعتوں کے سیلز ٹیکس کے حوالے سے بھی گفتگو کی گئی، وزیر اعظم نے مشیر خزانہ کو اگلے ہفتے تک لائحہ عمل سے متعلق رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی۔

وزیر اعظم نے اجلاس میں اپنی معاشی ٹیم کے ساتھ چھوٹی اور درمیانی صنعتوں کے فروغ اور بحالی پر بھی مشاورت کی اور تعمیرات سیکٹر کو مراعات دینے کے حوالے سے حکومتی حکمت عملی پر غور کیا گیا، اس دوران وزیر اعظم کو بریفنگ میں کہا گیا کہ 687 بند یونٹس کی فوری بحالی کے لیے اقدامات کیے جا سکتے ہیں، پبلک پرا ئیویٹ پارٹنرشپ کے تحت بحالی ممکن ہے۔

وزیر اعظم نے بند یونٹس کی بحالی کے لیے 60 دن کے اندر منصوبہ بندی کی ہدایت کی، اور کہا یونٹس کی بحالی کے لیے قوانین اور انتظامی اصلاحات کو مکمل کیا جائے، اور پرائیویٹ سیکٹر کو ایس ایم ایز کے فروغ کے لیے شامل کیا جائے، کاروبار میں آسانیاں پیدا کی جائیں تاکہ سرمایہ کاروں کو دقت کا سامنا نہ ہو۔

ان کا کہنا تھا ہمارا مقصد ہے کہ سرمایہ کار بغیر ہچکچاہٹ کے سرمایہ کاری کر سکیں، روزگار کے مواقع کے لیے مقامی چھوٹے صنعتی یونٹس کو ترجیح دی جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں