The news is by your side.

Advertisement

غیر معیاری پانی فراہم کرنے والی کمپنیوں کو قید اور سزائیں ہوں گی: گورنر پنجاب

لاہور: گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کا کہنا ہے کہ پنجاب آب پاک اتھارٹی صاف پانی کی فراہمی کے لیے بنی ہے، غیر معیاری پانی فراہم کرنے والی کمپنیوں کو قید اور لائسنس منسوخی کی سزائیں ہوں گی۔

تفصیلات کے مطابق گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور سے ایک چیریٹی وفد نے ملاقات کی۔ وفد میں امریکا، آسٹریلیا اور پاکستان سے نمائندے شریک تھے۔

فیصل آباد اور لاہور میں پانی کے 2 پلانٹ لگانے والی اس غیر سرکاری تنظیم کے وفد نے پنجاب میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی میں تعاون کے حوالے سے بات چیت کی۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے گورنر پنجاب چوہدری سرور نے کہا کہ ان کی سرپرستی میں چلنے والی سرور فاونڈیشن اب تک 200 واٹر فلٹریشن پلانٹ قائم کر چکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب آب پاک اتھارٹی صاف پانی کی فراہمی کے لیے بنی ہے۔ غیر معیاری پانی فراہم کرنے والی کمپنیوں کو 2 سال قید اور لائسنس کی منسوخی کی سزائیں دی جائیں گی۔

گورنر پنجاب نے مزید کہا کہ سال 2020 کے آخر تک 20 ملین لوگوں کو صاف پانی کی فراہمی ان کا ہدف ہے۔ انہوں نے اپیل کی کہ پلانٹ کی مانیٹرنگ کے لیے کمیونٹی ذمہ داری لے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں