The news is by your side.

Advertisement

سندھ میں جنگلی حیات کے تحفظ سے متعلق نیا قانون نافذ

کراچی: سندھ میں جنگلی حیات کے تحفظ سے متعلق نیا قانون نافذ کردیا گیا، قانون کی خلاف ورزی پر 6 ماہ قید اورجرمانہ ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق گورنر سندھ عمران اسماعیل نے جنگلی حیات کےتحفظ کے قانون 2020 پر دستخط کردیے، جس کے بعد سندھ میں جنگلی حیات کے تحفظ سے متعلق نیا قانون نافذ کردیا گیا۔

شکار کرکے سوشل میڈیا سمیت دیگر فورم پر جنگلی حیات کی نمائش مہنگی پڑے گی ، نئے قانون میں سوشل میڈیا پر شکار جانوروں اور پرندوں کی تصاویر پوسٹ کرنے والے کسی بھی شخص کو چھ ماہ کے لئے جیل بھیجا جائے گا۔

سائبر کرائم کے تحت مقدمات کی شق بھی شامل ہیں ، سندھ کا وائلڈ لائف محکمہ سائبر کرائم کے تحت مقدمہ درج کرے گااور وائلڈ لائف محکمہ سائبر کرائم کیسز ایف آئی اے کے ساتھ تحقیقات کرے گا۔

محکمہ سندھ وائلڈ لائف کے کنزرویٹر جاوید احمد مہر کا کہنا ہے کہ جنگلی حیات کے تحفظ کے قانون کی خلاف ورزی پر 6 ماہ قید اورجرمانہ ہوگا اور بغیر اجازت اور لائسنس کےبغیر جنگلی حیات کے رکھنے پر6ماہ قیدہوگی۔

قانون کے مطابق بغیر لائسنس دکانوں اور بازاروں میں پرندوں کی غیرقانونی خرید و فروخت پر بھی پابندی ہوگی، بل 2020 کا مقصد جنگلی حیات کے تحفظ کو بڑھانا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں