site
stats
بزنس

پاکستانیوں کی کتنی رقم بیرون ملک ہے، اس کا علم نہیں، گورنراسٹیٹ بینک

کراچی : اسٹیٹ بینک کے گورنر طارق باجوہ نے کہا ہے کہ پاکستانیوں کی کتنی رقم بیرون ملک میں ہے اس کا علم نہیں بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے ڈیٹا کا جائزہ لیا جا رہا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ پاکستانیوں کو آف شور ٹریڈنگ کی اجازت دینے پر بھی غور کررہے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، اے آر وائی نیوز کے نمائندے رضوان عامر کے مطابق جب گورنر اسٹیٹ بینک سے سوال کیا گیا کہ وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے مطابق پاکستانیوں کے دو سو ارب ڈالر جو سوئٹزر لینڈ کے بنکوں میں موجود ہیں کیا وہ واپس لائی جائے گی؟ یا اس کی واپسی کیلئے کیا اقدامات کیے گئے؟

اس کے جواب میں طارق باجوہ نے لاعلمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ رقم کا معلوم نہیں کہ وہ کتنی ہے انہوں نے کہا کہ پاکستانیوں کو آف شور ٹریڈنگ کی اجازت دینے پر بھی غور کررہے ہیں، اس سلسلے میں ان کے ڈیٹا کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔

آف شور ٹریڈنگ کو قانونی شکل دینے کیلئے ان کو باقاعدہ اجازت نامہ دیا جائے گا، ان کی ٹرانزیکشن پر بھی نظر رکھی جائے گی اور ان سے ٹیکس بھی وصول کیا جائے گا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ روپے کی قدر سے متعلق رپورٹ اسٹیٹ بینک نے وزارت خزانہ کو ارسال کردی ہے، اب یہ وزارت خزانہ پر منحصر ہے کہ وہ اس رپورٹ کو منظر عام پر لاتی ہے یا نہیں۔


مزید پڑھیں: روپے کی قدر میں کمی، تحقیقاتی رپورٹ جمع کروانے کا حکم


امریکہ میں ایچ بی ایل کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ اس معاملے میں جو جرمانے کی بات سامنے آئی ہے اس کو تیکنیکی غلطی سمجھا جائے۔


مزید پڑھیں: خواتین کو آسان شرائط پر قرضے فراہم کرنے کی اسکیم متعارف


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top