حکومت کا 7 نومبر کو دیوالی کی سرکاری چھٹی دینے کا فیصلہ -
The news is by your side.

Advertisement

حکومت کا 7 نومبر کو دیوالی کی سرکاری چھٹی دینے کا فیصلہ

کراچی / لاہور: سندھ اور پنجاب کی حکومتوں نے دیولی کے پیش نظر 7 نومبر کو ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والے سرکاری ملازمین کو ہر سال کی طرح امسال بھی چھٹی دینے کا فیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والے افراد 7 نومبر کو دیوالی کا تہوار مذہبی جوش و خروش سے منائیں گے، اس ضمن میں صوبائی حکومتوں نے سرکاری ملازمین کو تعطیل دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے ہندو برادری کو دیوالی کی پیش گی مبارک باد دیتے ہوئے سیکریٹری سندھ کو 7 نومبر کی سرکاری تعطیل کا نوٹی فکیشن جاری کرنے کی ہدایت جاری کی۔

دوسری جانب پنجاب حکومت نے بھی سرکاری محکموں میں تعینات ہندو برادری سے تعلق رکھنے والے ملازمین کو چھٹی دینے کا عندیہ دے دیا۔

مزید پڑھیں:  دیوالی کی رات کے خاص لمحے

ہندو بالمیکل ویلفیئر سوسائٹی پاکستان کے صدر چوہدری اعتباری لعل نے حکومت کی جانب سے ملازمین کو دیوالی کی سرکاری چھٹی دینے کے اقدام کو خوش آئند قرار دیا۔ ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت اور وزرائے اعلیٰ نے متعلقہ محکموں کو ہدایت کی ہے کہ وہ ہندو ملازمین کو بروقت تنخواہیں اور واجبات ادا کردیں۔

واضح رہے کہ ہندو برادری ہر سال موسم بہار میں دیوالی کے مذہبی تہوار کو مناتی ہے، اس کو عام طور پر دیوالی، دیپاولی اور عید چراغاں بھی کہا جاتاہے۔ اس مذہبی رسم کی تیاریاں نو دن قبل شروع ہوجاتی ہیں اور دیگر رسومات 5 دن تک جاری رہتی ہیں۔

اس حوالے سے اماوس یا نئے چاند کی رات کو اہم سمجھا جاتا ہے اور اس دن سب اپنے گھروں میں چراغ روشن کرتے ہیں۔ یہ تہوار شمسی قمری ہندو تقویم کے مہینے کارتیک کے حساب سے منایا جاتا ہے، گریگورین تقویم کے مطابق یہ تہوار وسط اکتوبر اور وسط نومبر میں آتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ہندو ملازمین کے لیے دیوالی کی چھٹی کا اعلان

دیوالی کی تاریخ بے حد قدیم ہے اور ہندو مت کے قدیم پرانوں میں اس کا ذکر’روشنی کی اندھیرے پرفتح کے دن‘ کے طور پر کیا جاتا ہے۔

ہندو برادری اس تہوار کو منانے کے لیے خصوصی اہتمام کرتی ہے جس کے تحت وہ نئے لباس زیب تن کرتے اس کے علاوہ گھروں اور بازاروں میں صفائی ستھرائی کا خاص اہتمام بھی کیا جاتا ہے۔

دیا جلانا اور رنگولی دو ایسے جز ہیں جن کے بغیر دیوالی کو نامکمل تصور کیا جاتا ہے، اس روز بچے آتش بازی کرتے ہیں جبکہ مندروں میں ’لکشمی‘ کی پوچا کا خاص اہتمام کیا جاتا اور مندر آنے والوں کو پرساد تقسیم ہوتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں