حکومت کی جانب سے عوام کیلئے ایک اور تحفہ متوقع
The news is by your side.

Advertisement

حکومت کی جانب سے عوام کے لئے ایک اور تحفہ متوقع

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے عوام کیلئے ایک اور تحفہ متوقع ہے، پٹرول کے بعد بجلی میں بھی ریلیف دیئے جانے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ دو ماہ سے عوام کو پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ریلیف دینے کے بعد بجلی کی قیمت میں بھی ریلیف متوقع ہے، وزارت خزانہ ذرائع کے مطابق بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی سمری ایک بار پھر روکی جاسکتی ہے۔

اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس کل ہوگا، اجلاس میں صرف ایل این جی معاہدوں کی رپورٹ پر غور متوقع ہے۔

خیال رہے اقتصادی رابطہ کمیٹی کے پچھلے اجلاس میں بھی بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی سمری پر فیصلہ موخر کیا گیا تھا اور ساتھ ہی بلز کی 100 فی صد وصولی یقینی بنانے اور ترسیل وتقسیم کے نقصانات کم سے کم کرنے کی ہدایت کی تھی۔

مزید پڑھیں : حکومت نے بجلی کی قیمتوں میں اضافے کا فیصلہ مؤخر کر دیا

نیپرا نے 3 روپے75 پیسےفی یونٹ اضافے کی تجویزدی تھی۔

دوسری جانب گیس کی قیمتوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن تاحال جاری نہیں ہوا ہے، جس کے باعث ابھی بھی گیس پر نئے نرخوں کا اطلاق نہیں ہوا ہے۔

یاد رہے 26 ستمبر کو نیپرا نے بجلی کی قیمت میں اضافے کی منظوری دی تھی، جس کے مطابق اگست کے کیلئے بجلی کی قیمت میں ایک روپیہ سولہ پیسے فی یونٹ کا اضافہ کیا گیا تھا، قیمت میں اضافہ ماہانہ فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں ہوا تھا۔

مزید پڑھیں :  بجلی 1 روپیہ 16پیسے مہنگی کر دی گئی

نیپرا کے مطابق اگست میں بجلی کی پیداواری لاگت پانچ روپے اکیانوے پیسے فی یونٹ رہی جبکہ صارفین سے چار روپے پچھتر پیسے فی یونٹ وصول کئے گئے۔

نیپرا کے فیصلے سے آئندہ ماہ میں سولہ ارب روپے کی وصول کئے جائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں