The news is by your side.

Advertisement

شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کی نئی حکمت عملی تیار

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے وزیر خزانہ کو سینیٹر بنانے کے لیے نیا پلان تشکیل دے دیا۔

اے آر وائی نیوز کو ذرائع سے ملنے والی اطلاع کے مطابق حکومت نے شوکت ترین کو خیبرپختون خواہ سے سینیٹر منتخب کرانےکا فیصلہ کیا ہے تاہم ابھی یہ فیصلہ نہیں ہوسکا کہ کون سا سینیٹر نشست چھوڑے گا۔

وزیراعظم نے شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کے لیے پارٹی کے سینئر رہنماؤں سے مشاورت تیزکردی۔ ذرائع کے مطابق کسی بھی سینیٹرکو تاحال مستعفی ہونےکی پیشکش نہیں کی گئی، بطور وفاقی وزیر قانونی مدت پوری ہونے پر شوکت ترین کو مشیربنادیاجائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ شوکت ترین کے سینیٹر منتخب ہونےتک وہ بطور مشیرخزانہ کام کریں گے، سینیٹرمنتخب ہونےکے بعد شوکت ترین کو وفاقی وزیربنادیاجائےگا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر کوئی راہ نہ نکلی تو حماداظہرکو دوبارہ وفاقی وزیر کا قلم دان عارضی طور پر دیا جائے گا۔

مزید پڑھیں: اسحاق ڈار کا الیکشن کمیشن کو اہم خط، شوکت ترین کے سینیٹر بننے کے خواب مدہم

یہ بھی پڑھیں: وزیراعظم کا شوکت ترین کو سینیٹ کا ٹکٹ دینے کا فیصلہ

یاد رہے کہ  16 اکتوبر کو شوکت ترین کی بطور وزیر خزانہ مدت ختم ہورہی ہے، جس کے بعد وزارت وزیراعظم کے پاس چلای جائے گی، شوکت ترین مشیربننےکے بعد مختلف کمیٹیوں کی سربراہی بھی نہیں کرسکیں گے، وہ ای سی سی سمیت دیگرکابینہ کمیٹیوں کی صدارت کے بھی اہل نہیں رہیں گے۔

آئین کےتحت وزیراعظم کسی بھی غیرمنتخب شخص کو 6ماہ کیلئے وفاقی وزیر کا قلم دان دے سکتے ہیں، 6ماہ میں شوکت ترین  کوکسی بھی نشست پرمنتخب نہیں کیاجاسکا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں