The news is by your side.

سعودی عرب جانے کے خواہشمند افراد کیلیے بڑی خبر

سعودی عرب ملازمت کے لیے جانے کے خواہشمند افراد کے لیے بڑی خبر ہے کہ وزارت افرادی قوت نے ریکروٹنگ ایجنسیز کی ذمے داری بتا دی ہے۔

سعودی وزارت افرادی قوت وسماجی بہبود کا کہنا ہے کہ گھریلو عملے کے مملکت پہنچنے کے 90 روز بعد متعلقہ ریکروٹنگ ایجنسی یا کمپنی کی ذمے داری ختم ہوجاتی ہے۔

سعودی اخبار کے مطابق سعودی وزارت افرادی قوت وسماجی بہبود کے ماتحت گھریلو عملے کے معاملات دیکھنے والے متعلقہ پروگرام ’مساند‘ کے حکام کا کہنا ہے کہ گھریلو عملے کے مملکت پہنچنے پر 90 روز بعد گھریلو کارکن کی تمام ذمے داری آجر پر عائد ہوجاتی ہے اور ریکروٹنگ ایجنسی یا کمپنی اس ذمے داری سے بری الذمہ ہوجاتے ہیں۔ ریکروٹنگ معاہدے کی دفعات میں یہ بات واضح کی گئی ہے۔

مساند کا کہنا ہے کہ آزمائشی مرحلے کے دوران آجر مقررہ نظام کے مطابق گھریلو کارکن کو رکھنے نہ رکھنے کا فیصلہ کرسکتا ہے۔ 90 دن کی آزمائشی مدت پوری ہونے کے بعد یہ اختیار ختم ہو جاتا ہے۔

مساند نے بتایا کہ گھریلو عملے کی درآمد کے حوالے سے ریکروٹنگ ایجنسیوں اور کمپنیوں کو امیدواروں کی درخواست قبول کرنے یا مسترد کرنے کا حق ہے تاہم امیدوار سے اتفاق رائے کے بعد ریکروٹنگ ایجنسی یا کمپنی کی ذمے داری ہے کہ وہ مقررہ مدت کے دوران گھریلو عملہ فراہم کرے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں