The news is by your side.

Advertisement

مینارپاکستان واقعہ، زیرحراست ملزمان کی شناخت کے لیے نادرا اور سی ڈی آرکی رپورٹ کا انتظار

لاہور :  گریٹراقبال پارک میں لڑکی کوہراساں کرنے کے واقعے میں زیرحراست 20سےزائدافرادکوتفتیش کےلیےسی آئی اےپولیس کےحوالےکردیاگیا، ملزمان کی شناخت کے لیے نادرا اور سی ڈی آرکی رپورٹ کا انتظار ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور گریٹراقبال پارک میں لڑکی کوہراساں کرنے کے معاملے میں زیرحراست 20سےزائدافرادکوتفتیش کےلیےسی آئی اےپولیس کے حوالے کر دیاگیا، ذرائع کا کہنا ہے کہ انویسٹی گیشن پولیس کو ملزمان کی شناخت کے لیے نادرا اور سی ڈی آرکی رپورٹ کا انتظار ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ حراست میں لیےگئےافرادسےپولیس کی پوچھ گچھ جاری ہے ، تمام افرادکومینارپاکستان سے ملحقہ علاقوں سےحراست میں لیاگیا، اس تمام افرادکی تصاویر اور فوٹیجز نادرا کو بھجوادی گئیں،ذرائع

نادراکی رپورٹ آج کسی وقت بھی پولیس کوموصول ہوجائےگئی، رپورٹ کےبعدزیرحراست ملزمان کومتاثرہ لڑکی کےسامنےلایاجائے گا۔

خیال رہے لاہور میں مینار پاکستان پر ہجوم کی جانب سے خاتون پر جنسی حملے کے واقعے کے بعد پولیس کی چھاپہ مار کارروائیاں جاری ہیں، اب تک متعدد  افراد کو گرفتار کیا جاچکا ہے ، پولیس کا کہنا تھا زیر حراست افراد کے موبائل نمبرز کی 14 اگست کو لوکیشن ٹریس کی جائے گی۔

یاد رہے کہ 14 اگست کے روز مینار پاکستان پر موجود خاتون کو وہاں موجود 400 افراد کی جانب سے تشدد، جنسی حملے اور لوٹ مار کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

وزیر اعظم عمران خان نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے خاتون سے دست درازی کرنے والوں کو فوری گرفتار کرنے کا حکم دیا تھا۔ وزیر اعظم نے آئی جی پنجاب سے رابطہ کر کے ہدایت دی ہے کہ خاتون سے دست درازی کرنے والوں کو فوری گرفتار کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں