The news is by your side.

Advertisement

گجر نالے میں ڈوبنے والے بچے کو تلاش کرنے سے ریسکیو ادارے کا انکار

کراچی : گجر نالے میں گزشتہ روز ڈوبنے والے سات سالہ ریحان کو کئی گھنٹے بعد بھی تلاش نہیں کیا جاسکا۔ کل اندھیرے کے باعث روکا گیا ریسکیو آپریشن بھی آج دوبارہ شروع نہیں کیا گیا۔ انتظامیہ نے تلاش کرنے سے معذوری ظاہر کردی، گمشدہ بچے کا بوڑھا باپ کس کے ہاتھ پر اپنے بچے کا لہو تلاش کرے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے گجر نالے میں ڈوبنے والا سات سالہ معصوم ریحان کل سے نہیں ملا ،بوڑھا باپ دہائی دیتا رہا، لیکن ریسکیو اداروں نے تلاش سے معذرت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک صفائی نہیں ہوگی بچے کو تلاش کرنا ممکن نہیں۔

گلبرگ کے علاقے کا رہائشی سات سالہ ریحان اسکول سے گھر آتے ہوئے پاؤں پھسلنے کے باعث گجر نالے میں گر گیا تھا، ریحان کے اہل خانہ اپنے لخت جگر کی تلاش کیلیے اب تک حکومتی مشینری کے منتظر ہیں، عزیز اقارب اپنی مدد آپ کے تحت بچے کی تلاش میں مصروف ہیں اہل خانہ پر ہر پل قیامت بن کر گزرنے لگا

اس موقع پر تحریک انصاف کے رہنما حلیم عادل شیخ نے انتظامیہ پر اپنے غصے کا اظہار کرتے ہوئے بچے کو تلاش کرنے کا مطالبہ کیا۔

دوسری جانب میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شہریوں نے بھی مطالبہ کیا ہے کہ گجرنالے کی صفائی ہی مسئلے کا حل ہے۔

مزید پڑھیں : گجر نالے میں گرنے والا بچہ تاحال نہ مل سکا

یاد رہے کہ گزشتہ روز گجر نالے میں ڈوبنے والے بچے کو سات گھنٹے کی کوشش کے بعد تلاش نہیں کیا جاسکا تھا، اور شام کو اندھیرے کے باعث تلاش کا کام یہ کہہ کر روک دیا گیا تھا کہ کل صبح دوبارہ بچے کو تلاش کیا جائے گا، لیکن آج ریسکیو ادارے نے تلاش کرنے سے انکار کردیا۔

سوال یہ ہے کہ آخر کب تک اداروں کی نا ایلی کے نتیجے میں ما ئیں اپنے بچوں کی یاد میں بین کر تی رہیں گی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں