The news is by your side.

Advertisement

گجرپورہ زیادتی کیس، حکام نے ملزم وقار کا ڈی این اے سیمپل لے لیا

لاہور : گجرپورہ اجتماعی زیادتی کیس میں ملوژ ملوژ وقار الحسن کا ڈی این اے سیمپل لے لیا، جسے متاثرہ خاتون کے ڈی این اے سے میچ کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے قریب گجرپورہ لنک روڈ پر تین بچوں کی ماں سے اجتماعی زیادتی کے ملزم وقار الحسن کا ڈی این اے سیمپل لے لیا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وقار الحسن سے لیا گیا ڈی این اے سیمپل متاثرہ خاتون کے سیمپل سے میچ کیا جائے گا، وقار الحسن کے واقعے میں ملوث ہونے کا حتمی فیصلہ رپورٹ پر ہے۔

مبینہ ملزم وقار الحسن کا ڈی این اے سی آئی اے نے جاکر کر فرانزک ایجنسی میں وصول کروایا، مبینہ ملزم وقار الحسن حسن کا کہنا ہے وہ اس کیس میں ملوث نہیں۔

واضح رہے کہ آج گجرپورہ میں خاتون سے اجتماعی زیادتی کیس کے حوالے سے اہم پیش رفت سامنے آئی ہے، اہم ملزم وقار الحسن نے از خود کرائم انوسٹی گیشن ایجنسی (سی آئی اے) دفتر میں پیش ہو کر گرفتاری دی، تاہم ملزم نے صحتِ جرم سے انکار کیا۔

لنک روڈ پر خاتون سے زیادتی کیس میں اہم پیش رفت، ملزم نے گرفتاری دیدی

وقار زیادتی کیس میں پنجاب پولیس کو انتہائی مطلوب ملزمان میں شامل تھا، پنجاب پولیس نے واقعے میں ملوث 2 مرکزی ملزمان کی اطلاع دینے والوں کو 25،25 لاکھ انعام دینے کا اعلان بھی کیا تھا۔

ملزم وقار الحسن کا کہنا ہے کہ میرا اس کیس سے کوئی تعلق نہیں ہے، عابد علی کے کال ریکارڈ سے ٹریس کیا جانے والا میرا نمبر دراصل میرے برادر نسبتی عباس کے پاس ہے، عباس عابد کا ساتھی ہے، میری دوسری سم دوسری سسر کے استعمال میں ہے۔

ملزم وقار کو سی آئی اے ماڈل ٹاؤن سے تفتیش کے لیے نا معلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے۔ ملزم کا ڈی این اے کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، بیان کے بعد پولیس نے برادر نسبتی عباس کی تلاش شروع کر دی ہے۔

واضح رہے کہ بدھ کی رات تین بجے کے قریب گجر پورہ میں خاتون سے اجتماعی زیادتی کا واقعہ پیش آیا تھا، خاتون بچوں کے ساتھ سفر کر رہی تھی، پٹرول ختم ہونے پر گاڑی بند ہو گئی، اس دوران دو ملزمان کھڑی گاڑی کا شیشہ توڑ کر خاتون کو قریبی جھاڑیوں میں لے گئے اور بچوں کے سامنے زیادتی کا نشانہ بنایا، ملزمان نے ایک لاکھ نقدی اور زیورات بھی لوٹ لیے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں