The news is by your side.

Advertisement

خاتون زیادتی کیس میں گرفتار شفقت کی تفصیلات سامنے آ گئیں

لاہور : خاتون زیادتی کیس میں گرفتار شفقت کی تفصیلات سامنے آ گئیں ، شفقت ضلع بہاولنگر تحصیل ہارون آباد کا رہائشی ہے جبکہ شفقت نے اعتراف کیا ہے کہ واقعے کا مرکزی ملزم عابد جرائم میں میرا ساتھی ہے۔

تفصیلات کے مطابق خاتون زیادتی کیس میں اہم پیشرفت ہوئی ، دیپالپور سے گرفتار شفقت کی تفصیلات سامنے آ گئیں ، ذرائع کا کہنا ہے کہ شفقت ضلع بہاولنگر تحصیل ہارون آباد کا رہائشی ہے اور اس کی عمر 23 سال ہے۔

ذرائع کے مطابق 23 سال کے شفقت کو گزشتہ رات دیپالپور میں چھاپہ مار کرگرفتار کیا گیا تھا، شفقت کی نشاندہی پولیس حراست میں موجود وقارالحسن نے کی تھی۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزم شفقت نے اعتراف جرم کرلیا اور کہا واقعےکامرکزی ملزم عابد جرائم میں میرا ساتھی ہے جبکہ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم شفقت کےڈی این اے رپورٹ کے بعد حتمی فیصلہ ہوگا۔

سی آئی اے ٹیم ملزم شفقت کودیپالپور سے لیکرلاہورپہنچ گئی، ملزم شفقت سابقہ ریکارڈ یافتہ بھی ہے اور اس کو دیپالپور سے گرفتارکیا گیا، شفقت علی اور اس کا خاندان پہلے بھی جرائم میں ملوث رہا ہے۔

ابتدائی تفتیش کے مطابق ملزم شفقت نے عابد کیساتھ ملکر11وارداتیں کیں جبکہ ملزم شفقت اور عابد پنجاب میں مختلف گینگزکیساتھ منسلک ہیں۔

دوسری جانب پولیس نے سی ڈی آرکی مددسے شفقت کے والد اللہ دتہ کو بھی گرفتار کر لیا ہے ، اللہ دتہ کےبیٹےشفقت کو بھی گزشتہ رات سی ٹی ڈی نےگرفتار کیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ موبائل سم اللہ دتہ کے نام پرہے جو بیٹا استعمال کررہاتھا،شفقت کو گرفتار کرکے آج ڈی این اے کرایاگیا، رپورٹ آنے کے بعد مزید حقائق سامنے آئیں گے۔

خاتون زیادتی کیس میں مرکزی ملزم عابد تاحال گرفتار نہیں ہوسکا تاہم مزید تفتیش جاری ہے۔

اس سے قبل کیس کے ملزم وقارکے برادرنسبی عباس نے بھی شیخوپورہ میں پولیس کو گرفتاری دی تھی ، عباس نے ویڈیو بیان میں جرم ماننے سے انکار کرتے ہوئے کہا تھا کہ میں بے گناہ ہوں،خودکوپولیس کےسامنےپیش کر رہا ہے،امیدہے پولیس ناجائزنہیں کرے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں