site
stats
پاکستان

گجرات : پولیس گردی،50 بکرے عید سے پہلے قربان

گجرات : پولیس گردی کے ایک اور واقعے میں پچاس سے زائد بکرے عید قرباں سے پہلے ہی قربان ہوگئے، آئی جی پنجاب مشتاق سیکھرا نے ڈی پی او سے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی.

پولیس نے سستا بکرا نہ دینے پر بیوپاریوں کو گرفتار کر کے اسی سے زائد بکرے ریلوے لائن کی جانب بھگا دیئے جبکہ ٹرین کی زد آ کر پچاس بکرے ہلاک اور تیس کے قریب زخمی ہوگئے۔

افسوس ناک واقع اس وقت پیش آیا جب پولیس چوکی جٹووکل کا اہلکار شبیر قربانی کا بکرا سستے داموں خریدنے کے لئے گیا، سستا بکرا نہ ملنے پر شبیر پولیس چوکی سے اپنی پیٹی بند بھائیوں کو بلا لایا، پولیس نے آتے ہی تمام بیوپاریوں کو گرفتار کر کے پولیس وین میں ڈال لیا جبکہ احاطہ کا عقبی دروازہ کھول کر اسی کے قریب بکرے ریلوے ٹریک کی جانب بھگا دیئے۔

راولپنڈی سے لاہور جانے والی ٹرین کی زد میں آ کر پچاس بکرے ہلاک اور تیس کے قریب زخمی ہو گئے، حادثہ کی اطلاع ملتے ہی پولیس اہلکار موقع سے فرار ہو گئے۔

بیوپاریوں نے مرنے والے بکروں کو سروس موڑ سڑک پر رکھ کر روڈ بلاک کر کے پولیس کے خلاف شدید نعرہ بازی کی، واقع کی اطلاع ملنے پر ڈی پی او گجرات رائے ضمیر الحق نے واقع کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس چوکی جٹووکل کے انچارج اشرف ملہی سمیت چار اہلکاروں کو معطل کر دیا۔

دوسری جانب ڈی پی او گجرات کا کہنا تھا کہ جن پولیس اہلکاروں کی وجہ سے یہ حادثہ پیش آیا ہے ان کی تنخواہ کاٹ کربیوپاریوں کا نقصان پورا کیا جائے گا

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top