پاکستانیوں سمیت 490 ملازمین کے سعودی عرب میں پھنسے ہونے کا انکشاف saudi arabia
The news is by your side.

Advertisement

قطر بحران : پاکستانیوں سمیت 490 غیرملکی سعودی عرب میں پھنس گئے،انکشاف

لندن : قطری حکومت نے انکشاف کیا ہے کہ حالیہ خلیجی بحران کے بعد  سعودی عرب میں روزگار کے لیے جانے والے پاکستانیوں سمیت مختلف ممالک کے 490 ملازمین وہاں دو ماہ سے پھنسے ہوئے ہیں، بحران کے بعد قطری شہری تو نکل آئے مگر ان کے زرعی فارم کے غیر ملکی ملازمین کو روک لیا گیا۔

قطر کی قومی کمیٹی برائے انسانی حقوق کے مطابق پاکستان سمیت کئی ممالک سے تعلق رکھنے والے 490 غیر ملکی ملازمین ایسے ہیں جو رواں سال 5 جون کو شروع ہونے والے خلیجی بحران کے آغاز سے اب تک سعودی عرب میں پھنسے ہوئے ہیں، ان افراد میں بڑی تعداد پاکستان، بھارت، نیپال اور سوڈان سے تعلق رکھتی ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق کمیٹی کے بین الاقوامی تعاون ڈویژن کے سربراہ سعد سلطان آل عبداللہ نے انہیں بتایا کہ سعودی عرب میں پھنسے ایسے افراد کی اصل تعداد اس سے کہیں زیادہ ہو سکتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ قطر سے قطع تعلق کا اعلان کرنے کے ساتھ ہی تینوں خلیجی ممالک نے اپنے ہاں مقیم قطری باشندوں کو ملک چھوڑنے کا حکم دے دیا تھا جبکہ وہاں موجود ان کی جائیدادیں اور اثاثے منجمد کر دیئے گئے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ بہت سے قطری باشندوں کے سعودی عرب میں زرعی فارم تھے جن پر ان کے غیرملکی ملازمین کام کرتے تھے، قطر کے محاصرے کے بعد قطری شہری تو وہاں سے بحفاظت نکل آئے مگر ان کے ملازمین کو روک لیا گیا۔

سعد سلطان ال عبداللہ کے مطابق تین خلیجی ممالک کی جانب سے قطری شہریوں کے بنکوں میں موجود اثاثے منجمد کرنے اور رقم کی ترسیل پر پابندی کے باعث قطری مالکان کی طرف سے سعودی عرب میں پھنسے ان ملازمین کو گذشتہ دو ماہ سے تنخواہوں کی ادائیگی بھی ممکن نہیں ہو پائی ہے۔

یاد رہے کہ قطر کا واحد زمینی رابطہ صرف سعودی عرب کے ساتھ ہے اور باقی تین اطراف سے اس کو خلیج فارس کے سمندر نے گھیر رکھا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں