police گلستان جوہر: چھرے مار کی تلاش میں پولیس کا گشت، اسٹریٹ کرائم میں کمی
The news is by your side.

Advertisement

گلستان جوہر: چھرے مارکی تلاش میں پولیس کا گشت، اسٹریٹ کرائم میں کمی

کراچی : گلستان جوہر میں خواتین پرچھرے سے وارکرنے والے چھلاوے کو توپولیس تلاش نہ کرسکی مگر گلستان جوہرمیں پولیس کی بھاری تعدادمیں تعیناتی نے اسٹریٹ کرائم کم کردیئے۔

 تفصیلات کے مطابق چھرےمارکی پرچھائی سے ناآشنا پولیس انجانے میں گلستان جوہر کے رہائشیوں کیلئےمسیحا بن گئی، شہریوں کو موٹرسائیکلیں چوری ہونےکا ڈر ہے نہ گن پوائنٹ پر موبائل فون چھننے کےواقعات عام رہے۔

فائرنگ اورقتل کی وارداتیں بھی کم ہوگئیں تو ڈکیت بھی گلستان جوہر کارُخ کرتے ہوئےگھبرانےلگے، چھرےمارکی تلاش میں مگن پولیس کو خبر نہ ہوئی کہ ان کی موجودگی سےگلستان جوہرمیں کرائم ریٹ کم ہوگیا۔

تازہ ترین اعداد وشمارکے مطابق گزشتہ ماہ یکم ستمبر سے دس ستمبرتک فائرنگ اور قتل کےآٹھ واقعات ہوئے، اکیس موٹرسائیکل سواروں کو پیدل کردیاگیا، بیالیس افراد سے اسلحے کے زور پرموبائل فون اور پرس چھیننے کےواقعات رپورٹ ہوئے۔


مزید پڑھیں: چھری مارچھلاوے کو پکڑنے کیلئے چھ سو پولیس اہلکار تعینات


اکتوبر کے دس دنوں میں گلستان جوہر میں فائرنگ اور قتل کے صرف تین واقعات پیش آئے، سات موٹرسائیکلیں چوری ہوئیں، سترہ موبائل فون چھیننے کی وارداتیں ہوئیں۔

گلستان جوہرکےرہائشی بےبسی کی تصویر بنی پولیس پر افسوس کرنے کے بجائے مسرت کا اظہار کر رہے ہیں کہ کم ازکم پولیس کی تعیناتی سے علاقے میں جرائم کی شرح تو کم ہوئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں