The news is by your side.

Advertisement

حکومت نے گناہ ٹیکس کے نفاذ کے لیے کمر کس لی، سمری کابینہ ڈویژن کو ارسال

اسلام آباد: حکومت نے گناہ ٹیکس کے نفاذ کے لیے کمر کس لی ہے، وزارت صحت نے گناہ ٹیکس کی سمری کابینہ ڈویژن کو ارسال کردی۔

تفصیلات کے مطابق ٹیکس کی سمری وزارت خزانہ کی مشاورت سے تیار کی گئی ہے، سمری میں سفارش کی گئی ہے کہ سگریٹ، مشروبات پر گناہ ٹیکس عائد کیا جائے۔

گناہ ٹیکس سے سالانہ 60 سے 70 ارب روپے آمدن متوقع ہے

ذرائع کے مطابق سمری میں سفارش کی گئی ہے کہ سگریٹ پیکٹ پر 10 روپے گناہ ٹیکس عائد کیا جائے، سگریٹ کی تمام کیٹگریز پر گناہ ٹیکس عائد کیا جائے گا، گناہ ٹیکس کے نفاذ سے سگریٹ مزید مہنگے ہوں گے۔

سمری میں مشروب کی 100 ملی لیٹر بوتل پر دو روپے گناہ ٹیکس عائد کرنے کی سفارش کی گئی ہے، ملک میں سالانہ 4 ارب سے زائد سگریٹ کا پیکٹ فروخت ہوتا ہے، گناہ ٹیکس سے سالانہ 60 سے 70 ارب روپے آمدن متوقع ہے۔

ذرائع کے مطابق گناہ ٹیکس کابینہ کی منظوری کے بعد فوری نافذ العمل ہوگا، گناہ ٹیکس کی آمدن شعبہ صحت کی بہتری پر خرچ کی جائے گی، حاصل کردہ رقم وزیراعظم ہیلتھ پروگرام کے تحت استعمال ہوگی۔

مزید پڑھیں: حکومت کا سگریٹ پینے والوں پر گناہ ٹیکس لگانے کا فیصلہ

سمری میں کہا گیا ہے کہ مشروبات پر ٹیکس سے غیر متعدی امراض کے پھیلاؤ میں کمی آئے گی، سافٹ ڈرنکس بچوں میں موتاپے، ذیابیطس کا سبب بن رہے ہیں۔

واضح رہے کہ پاکستان سگریٹ پر گناہ ٹیکس لگانے والا دنیا کا دوسرا ملک ہے اس سے قبل فلپائن سگریٹ پر گناہ ٹیکس لگانے والا دنیا کا پہلا ملک ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں