The news is by your side.

Advertisement

گوادر جوڈیشل کمپلیکس توڑنے والا ملزم سی ٹی ڈی کے ہاتھوں گرفتار

کراچی: کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) کے ہاتھوں مچھر کالونی سے گرفتار ہونے والے ملزم طفیل نے گوادر جوڈیشل کمپلیکس توڑنے کا اعتراف کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق سی ٹی ڈی کے ہاتھوں گرفتار ملزم طفیل نے اعتراف کیا ہے کہ اس نے مارچ 2019 میں ساتھیوں کے ہمراہ گوادر جوڈیشل کمپلیکس توڑا، اور کمپلیکس سے 3 ایس ایم جی رائفل لے کر فرار ہوئے۔

ملزم طفیل نے تفتیش کے دوران بتایا کہ انھوں نے جوڈیشل کمپلیکس سے فرار ہوتے ہوئے فائرنگ بھی کی جس سے ایک سپاہی زخمی ہوا، فرار ہونے کے بعد سمندر کے راستے اسپیڈ بوٹ پر سوار ہو کر ایران گئے، 5 ماہ ایران میں رہنے کے بعد کراچی لیاری میں کافی عرصہ روپوش رہا۔

ملزم نے بتایا کہ وہ 2018 میں منشیات کے کیس میں بھی گوادر سے گرفتار ہوا تھا، 300 کلو گرام چرس برآمدگی کیس میں پولیس نے اسے گرفتار کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  ڈیرہ غازی خان میں سی ٹی ڈی کی کارروائی، 2 دہشت گرد گرفتار

یاد رہے کہ گزشتہ روز سی ٹی ڈی اہل کاروں نے ڈیرہ غازی خان میں چھاپا مار کارروائی کے دوران کالعدم تنظیم کے دو دہشت گرد گرفتار کر لیے تھے، چھاپا دہشت گردوں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع موصول ہونے پر مارا گیا تھا، ملزمان کا تعلق کالعدم تنظیم القاعدہ ہند سے ہے۔

ترجمان انسداد دہشت گردی کا کہنا تھا کہ گرفتار دہشت گرد حساس ادارے کے دفتر کو نشانہ بنانا چاہتے تھے، دونوں دہشت گردوں کی شناخت اسماعیل اور ولی محمد کے ناموں سے ہوئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں