The news is by your side.

Advertisement

حافظ حسین احمد کے فضل الرحمان اور نواز شریف سے متعلق اہم انکشافات

اسلام آباد : جے یو آئی ف کے رہنما حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان جس اسمبلی کو جعلی کہتے تھے وہاں سے صدارتی الیکشن لڑا ان کے بیٹے بھی وہیں موجود ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام دی رپورٹرز میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان آزادی مارچ کے دوران چوہدری شجاعت کے ساتھ چند لوگوں سے ملے تھے وہ صرف اتنا ہی بتادیں کہ وہ لوگ کون تھے جن سے ملے تھے یا جنہوں نے یہ کہا تھا کہ مارچ تک عمران خان کو نکال دیں گے، ایک طرف استعفے اور دوسری طرف کہتے ہیں کہ سینیٹ الیکشن نہیں لڑیں گے۔

حافظ حسین احمد کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان اسمبلی کو جعلی کہتے تھے، انہوں نےاسی اسمبلی سے نوازشریف کے ایک فون پر صدارتی الیکشن کیوں لڑا؟ اسمبلی کو جعلی کہتے ہیں تو ان کے بیٹے وہاں اب تک کیوں موجود ہیں؟ پارٹی کا اجتماعی فیصلہ ہوا کہ مولانا صدارتی الیکشن نہیں لڑیں گے لیکن اجلاس کے بعد مولانا کو فون آتا ہے اور وہ صدارتی الیکشن لڑتے ہیں۔

مولانا ہم پر یہ الزام لگاتے ہیں کہ ہم اس لیے ناراض ہوئے کہ ہمیں سینیٹ ٹکٹ نہیں دیا گیا، ہم تو چاہتے ہیں جے یو آئی ف میں بھی الیکشن شفاف ہونے چاہئیں، پانی سر سے اونچا ہوجائے تو یقیناً لوگ بولیں گے، ہم کوئی الگ پارٹی یا گروپ نہیں بنائیں گے، ہم پارٹی دستور کے مطابق ہی پارٹی کو چلانے کی کوشش کریں گے۔

ایک سوال کے جواب میں جے یو آئی ف کے رہنما کا کہنا تھا کہ اب تک جو بھی گفتگو کی نوازشریف کی تقریر کیخلاف کی، نوازشریف نے فوج کو بغاوت پر آمادہ کرنے کی کوشش کی، ان کی گفتگو پی ڈی ایم کے بیانیے میں شامل نہیں ہے اور نہ ہی جے یوآئی نوازشریف کی فوج سے متعلق اس گفتگو پر اتفاق رکھتی ہے، میں نے فضل الرحمان یا نوازشریف کیخلاف گفتگو نہیں کی، مجھے شوکاز دیا گیا اور پھر فوری طور پر پارٹی سے بھی نکال دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے جو فوج کیخلاف گفتگو کی وہ درست نہیں تھی کیونکہ وہ خود جنرل جیلانی کی پیداوار تھے اور انہیں ضیاالحق لے کر آئے تھے، نوازشریف زندگی کے اس حصے میں آکراسٹیبلشمنٹ کیخلاف ہوگئے، اب وہ کہتے ہیں کہ میں بدل گیا ہوں اور ووٹ کوعزت دو، نوازشریف نے پرویزمشرف کے ساتھ بھی10سال کی ڈیل کی تھی۔

حافظ حسین احمد کا کہنا تھا کہ نواز شریف بیماری کا بہانہ بناکر عالمی طاقتوں کے ذریعے باہر کیوں گئے؟ نواز شریف بدل چکے تو خواجہ آصف فون کرکے کیوں کہتے کہ میں ہار رہا ہوں، واقعی کسی میں جرات ہے تو لندن میں چھپ کرنہ بیٹھے، میدان میں آئے ہم ساتھ ہیں، ہمیں بلا کرایک بار نہیں تین بار دھوکا کیا گیا، مولانا فضل الرحمان ایسے لوگوں کو کیوں نہیں روکتے، جمہوریت کسی کی میراث یا جاگیر نہیں ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں