سعودی عرب میں حجاج کرام مناسکِ حج کا آغاز کل سے کریں گے
The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں حجاج کرام مناسکِ حج کا آغاز کل سے کریں گے

منیٰ : سعودی عرب میں مناسک حج کا آغاز کل سے ہوگا، دنیا بھر سے آئےعازمین حج کےقافلے منیٰ پہنچیں گے، جہاں دنیا کی سب سے بڑی خیمہ بستی آباد ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق منیٰ میں دنیا کی سب سے بڑی خیمہ بستی آج سے آباد ہوگی، فریضہ حج کی ادائیگی کے لیے دنیا بھر سے آئے لاکھوں عازمین حج لبیک اللھم لبیک کی تسبیح پڑھتے ہوئے منیٰ پہنچیں گے، جس کے لئے انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں اور مکہ، منیٰ، مزدلفہ اور میدان عرفات کی فضائی نگرانی شروع کر دی گئی ہے۔

منی حرم سے آٹھ کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔

مناسک حج کی ادائیگی کا سلسلہ کل 8ذی الحج سے شروع ہوگا، جو بارہ ذوالحج تک جاری رہیں گے ، آٹھ ذوالحج کو عازمین نماز فجر کی ادائیگی کے بعد بیت اللہ سے منیٰ کا رخ کریں گے ،جہاں قیام کے دوران ظہر، عصر، مغرب عشاء اور فجر کی نمازیں ادا کریں گے۔

نوذی الحج کی صبح میدان عرفات کی طرف روانہ ہوں گے، جہاں اہم رکن اعظم یعنی وقوف عرفہ اداکریں گے اور خطبہ حج سنیں گے پھر امام حج کی اقتدا میں نماز ظہر اور عصرایک ساتھ ادا کریں گے۔

عازمین میدان عرفات میں حکمِ خداوندی کے مطابق سورج غروب ہونے تک لازمی قیام کریں گے، حجاج کرام کی غروب آفتاب کے بعد مزدلفہ روانگی شروع ہوگی، جہاں وہ نماز مغرب اور عشاء ملاکر پڑھیں گے اور رات بھر کھلے آسمان تلے قیام کریں گے۔

دس ذوالحج کو طلوع آفتاب کے بعد حجاج کرام مزدلفہ سے کنکریاں اکٹھی کرکے جمرات (شیطان) کو ماریں گے اور قربانی کرنے کے بعد سر منڈوا کر احرام کھول دیں گے جبکہ خواتین بھی سر کے بالوں کی نوکیں کاٹیں گی، جس کے بعد حجاج مسجد حرام پہنچ کر طواف زیارت کریں گے۔

رمی گیارہ اور بارہ ذوالحج کو بھی جاری رہے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں