The news is by your side.

Advertisement

بگاڑ ٹھیک کرنے کے لیے مہنگائی کے دور سے گزرنا پڑے گا، حماد اظہر

اسلام آباد: وزیر مملکت برائے ریونیو حماد اظہر نے کہا ہے کہ بگاڑ ٹھیک کرنے کے لیے مہنگائی کے دور سے گزرنا پڑے گا، نچلے طبقے پر کم سے کم بوجھ ڈالنے کی کوشش کررہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیر مملکت برائے ریونیو حماد اظہر نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام ’اعتراض ہے‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ معاشی مسائل کے حل کے لیے ماضی میں قدم نہیں اٹھائے گئے، معیشت کو عارضی طور پر مستحکم کیا جاتا پھر الیکشن پر ہر چیز کو کھلا چھوڑا جاتا تھا، معیشت کو جیسے جیسے بحران سے نکالیں گے ریفارمز نظر آتے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ معاشی استحکام کے لیے پرائیویٹ سیکٹر کو مضبوط کرنے کی کوشش کررہے ہیں، 50 لاکھ لوگوں کا ڈیٹا اس ماہ میں اکٹھا کرکے ایکشن لیں گے، یہ وہ 50 لاکھ لوگ ہیں جو امیر تو ہیں مگر ٹیکس نہیں دیتے۔

مزید پڑھیں: ماضی کی حکومت نے معیشت کا بیڑا غرق کیا، مشکلات جلد ختم ہوجائیں گی، حماد اظہر

وزیر مملکت نے کہا کہ اداروں سے مل کر ڈیٹا بیس بنارہے ہیں، قوانین میں بھی ترامیم کیں، ڈیٹا بیس کے ذریعے ٹیکس نہ دینے والوں کے خلاف ثبوت کے ساتھ ایکشن ہوگا۔

حماد اظہر نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات پر 97 ارب روپے کی سبسڈی دے چکے ہیں، پچھلے 10 میں سے 8 سال میں ایف بی آر اپنے ٹارگٹ تک نہیں پہنچ سکا ہے، حکومت نے آکر ایف بی آر میں قوانین کو رائج کیا۔

انہوں نے کہا کہ اسد عمر کے آئی ایم ایف سے مذاکرات چل رہے ہیں، ن لیگ اور پیپلزپارٹی آئی ایم ایف کے پاس جاتی رہی ہیں، ن لیگ آئی تو پہلے سال مہنگائی 10 فیصد تک گئی، پی پی دور میں بھی مہنگائی 25 فیصد کی شرح پر گئی تھی، دونوں جماعتیں کبھی آئی ایم ایف کی شرائط پارلیمنٹ میں لے کر نہیں آئیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں