The news is by your side.

Advertisement

غزہ: طالبعلم سمیت متعدد فلسطینیوں کی گرفتاری کا معاملہ، حماس کا شدید ردعمل

غزہ: فلسطین میں اسرائیلی سیکیورٹی فورسز کے ہاتھوں طالبعلم سمیت متعدد فلسطینیوں کی گرفتاری پر حماس نے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ناقابل قبول قرار دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق قابض اسرائیلی فوج کی نہتے فلسطینیوں کے خلاف کارروائیاں عروج پر ہیں، وحشیانہ کریک ڈاؤن میں گزشتہ روز صبح کے وقت 21 فلسطینیوں کو گرفتار کیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ حماس نے غرب اردن سے فلسطینی اتھارٹی کی پولیس کے ہاتھوں فلسطینی طالبعلم موسیٰ الدویکات کی گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ غرب اردن میں فلسطینی قوم کو عباس ملیشیا ءکی شکل میں ہیجان خیز مافیا کا سامنا ہے۔

حماس کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ موسیٰ الدویکات کی گرفتاری غیر قانونی اور غیر اخلاقی اقدام ہے، فلسطینی اتھارٹی غرب اردن میں شہریوں کےخلاف خوف کی فضاءپیدا کرنے اور ہیجان انگیزی کی کوشش کر رہی ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا تھا کہ غرب اردن میں فلسطینی اتھارٹی کی جانب سے بے گناہ فلسطینیوں کے خلاف کریک ڈاﺅن جاری ہے اور اس کریک ڈاﺅن کے دوران عباس ملیشیا آئین اور قانون کی دھجیاں اڑا رہی ہے۔

اسرائیلی فوج کا وحشیانہ کریک ڈاﺅن ،21 فلسطینیوں کو حراست میں لے لیا

واضح رہے کہ اسرائیلی فوج نے ڈھٹائی کا مظاہرہ کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ گرفتار فلسطینیوں میں بعض اسرائیل کے خلاف مزاحمتی کارروائیوں میں سیکورٹی اداروں کو مطلوب تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں